Saturday , December 16 2017
Home / شہر کی خبریں / کرایہ کی عمارتوں میں سرکاری اسکولوں کو خطرہ

کرایہ کی عمارتوں میں سرکاری اسکولوں کو خطرہ

مالکین جائیدادتخلیہ کرانے کوشاں ،کرایہ کی عدم ادائیگی کی شکایت

حیدرآباد۔15جنوری(سیاست نیوز) کرایہ کی عمارتوں میں چلائے جانے والے سرکاری اسکولوں کے کرایوں کی ادائیگی میں کی جانے والی کوتاہی کے سبب مالکین جائیدادکو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور مالکین جائیداد اپنی جائیدادوں میں چلائے جانے والے اسکولوں کا تخلیہ کروانے کے متعلق غور کرنے لگے ہیں۔ دونوں شہرو ںمیں سرکاری اسکول جو کرایہ کی عمارتوں میں چلائے جاتے ہیں ان کے کرایوں کی ماہانہ ادائیگی کے متعلق ضلع تعلیمی عہدیدار کی غیر سنجیدگی کے سبب سرکاری اسکولو ںکے صدر مدرسین کو مالکین جائیداد سے الجھنا پڑتا ہے۔ شہر کے کئی مقامات پر کرایہ کی عمارت میں سرکاری اسکول چلائے جا رہے ہیں لیکن ان جائیدادوں کے مالکین کو اپنی عمارتوں کے کرایہ کے لئے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر کے دفتر کے چکر کاٹنے پڑ رہے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ حکومت کی جانب سے ماہانہ وقت پر کرایہ ادا نہ کئے جانے کے سبب مالکین جائیداد مسائل کا شکار ہوچکے ہیں اور اب اپنی جائیدادوں سے اسکولوں کو خالی کروانے کے متعلق غور کررہے ہیں۔ محکمہ تعلیم کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ شہری علاقوں میں کرایوں کی ادائیگی میں کچھ تاخیر ہوتی ہے کیونکہ کرایہ زیادہ ہونے کے سبب ہر مالک جائیداد کو ماہانہ کرایہ ادا کرنا دشوار ہوتا ہے اسی لئے جیسے جیسے حکومت سے بجٹ کی اجرائی عمل میں آتی ہے اس اعتبار سے کرایہ جاری کیا جاتا ہے ۔کرایہ کی اجرائی میں ہونے والی تاخیر کی بنیادی وجہ حکومت کی جانب سے بجٹ کی اجرائی میں تاخیر ہوتی ہے ۔ محکمہ تعلیم کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے بجٹ کی اجرائی کی صورت میں کرایوں کی اجرائی میں انہیں کوئی تکلیف نہیں ہوتی لیکن جب بجٹ ہی موجود نہ ہو تو ایسی صور ت میں کس طرح کرایوں کی اجرائی عمل میںلائی جائے گی۔جاریہ ماہ کے اوائل میں گولکنڈہ میں واقع ایک سرکاری اسکول کو مالک جائیداد کی ہدایت پر مقفل کردیا گیا تھا لیکن اس کی اطلاع کے ساتھ ہی حیدرآباد ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر نے حرکت میں آتے ہوئے کرایہ کی اجرائی کو یقینی بنایا تھا جس کے سبب اسکول کی کشادگی عمل میں لائی گئی بصورت دیگر اس سرکاری اسکول کو مقفل ہی رکھا جاتا۔حکومت کی جانب سے کرایہ کی عمارتوں میں چلائے جانے والے سرکاری اسکولوں کے کرایوں کی ادائیگی کو باقاعدہ نہ بنائے جانے کی صورت میں اس طرح کے کئی واقعات رونما ہوسکتے ہیں اسی لئے حکومت کو چاہئے کہ تمام سرکاری اسکول جو کرایہ کی عمارتوں میں چلائے جاتے ہیں ان کے کرایہ کی بروقت ادائیگی کے ہدایت جاری کی جائیں۔

TOPPOPULARRECENT