Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / کرشنا و گوداوری کی سطح آب میں اضافہ

کرشنا و گوداوری کی سطح آب میں اضافہ

تلنگانہ اور پڑوسی ریاستوں میں بارش کے مثبت اثرات
حیدرآباد۔14ستمبر ( سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ اور پڑوسی ریاستوں مہاراشٹرا اور کرناٹک میں گذشتہ چند دنوں کے دوران ہوئی شدید بارش کے نتیجہ میں دریائے کرشنا اور دریائے گوداوری میں پانی کے بہاؤ میں زبردست اضافہ ہوا ۔ بالخصوص دریائے کرشنا میں پانی کے بہاؤ میں اضافہ کے باعث سری سیلم پراجکٹ کی سطح آب میں زبردست اضافہ ہوا ہے ۔ باوثوق سرکاری ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہے کہ سری سیلم پراجکٹ میں دریائے کرشنا سے پانی کی کافی مقدار میں ذخیرہ ہونے پر سری سیلم پراجکٹ کی سطح آب بڑھ کر 831 فٹ ہوچکی ہے ۔ جبکہ سری سیلم پراجکٹ کی مکمل سطح آب 885 فٹ ہے ۔ توقع کی جارہی ہے کہ آئندہ چند دنوں میں سری سیلم پراجکٹ کی سطح آب مکمل ہوجائے گی ۔ سری سیلم پراجکٹ میں دریائے کرشنا سے پانی کی آمد (22.489) کیوزکس ہے ۔ علاوہ ازیں نیکشید پراجکٹ سے پانی کی سطح آب کو برقرار رکھنے کیلئے 8ہزار کیوزکس پانی چھوڑا جارہا ہے ۔ اس ذرائع کے مطابق بتایا جاتا ہیکہ آئندہ دنوں میں سری سیلم پراجکٹ میں پانی کے ان فلو ( پانی کی آمد) میں اضافہ کے باعث پراجکٹ کی سطح آب مکمل ہونے کی قوی توقع پائی جاتی ہے ۔یہاں یہ بات قابل ذـر ہے کہ دونوں شہروں حیدرآباد و سکندرآباد کو دریائے کرشنا اور گوداوری سے پانی سربراہ کیا جاتا ہے اور ان دونوں دریاؤں کی سطح آب میں اضافہ سے شہر میں پانی کی قلت کے اندیشوں میں کمی ہوئی ہے ۔ علاوہ ازیں شہر میں بارش سے دونوں آبی ذخائر حمایت ساگر و عثمان ساگر کی سطح آب میں بھی اضافہ کا امکان ہے ۔

TOPPOPULARRECENT