Saturday , September 22 2018
Home / شہر کی خبریں / کرشنا کے پانی کی تقسیم میں تلنگانہ کے ساتھ انصاف کا مطالبہ

کرشنا کے پانی کی تقسیم میں تلنگانہ کے ساتھ انصاف کا مطالبہ

مرکزی وزیر اوما بھارتی سے وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ کی نمائندگی

مرکزی وزیر اوما بھارتی سے وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ کی نمائندگی
حیدرآباد ۔ 14 ۔جولائی (سیاست نیوز) ریاستی وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ نے آج ٹی آر ایس ارکان پارلیمنٹ کے ہمراہ مرکزی وزیر اوما بھارتی سے ملاقات کی۔ انہوں نے دریائے کرشنا کے پانی کی تقسیم کے سلسلہ میں تلنگانہ ریاست کے ساتھ مناسب انصاف کیلئے مرکزی وزیر کو یادداشت پیش کی ۔ نئی دہلی میں ہوئی اس ملاقات میں ہریش راؤ نے اوما بھارتی کو کرشنا کے پانی کی تقسیم کے سلسلہ میں تلنگانہ کے ساتھ کی جارہی ناانصافیوں کا حوالہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ پانی کی تقسیم میں پہلے بھی تلنگانہ کو نظرانداز کیا جاچکا ہے، جس کے سبب تلنگانہ کے 10 اضلاع میں آبپاشی شعبہ متاثر ہوا۔ انہوں نے کہا کہ اب جبکہ تلنگانہ ایک نئی ریاست کے طور پر وجود میں آچکی ہے۔ مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ کرشنا کے پانی کی تقسیم میں تلنگانہ کو مناسب حصہ داری دے جو کہ اس کا جائز حق ہے۔ انہوں نے پراناہیتا چیوڑلہ پراجکٹ کو قومی پراجکٹ کا درجہ دینے کا مرکز سے مطالبہ کیا۔ ہریش راؤ نے کہا کہ ریاست کی تقسیم کے موقع پر مرکزی حکومت نے اس پراجکٹ کو قومی پراجکٹ کا درجہ دینے کا وعدہ کیا تھا ۔ اس پراجکٹ کی تکمیل سے نہ صرف دارالحکومت حیدرآباد بلکہ 4 اضلاع میں پانی کی قلت سے نمٹا جاسکے گا۔ اوما بھارتی سے ملاقات کے بعد ہریش راؤ نے کہا کہ مرکزی وزیر نے پانی کی تقسیم اور آبپاشی پراجکٹ کی تعمیر کے سلسلہ میں تلنگانہ سے انصاف کا تیقن دیا ہے۔ ہریش راؤ نے کہا کہ چار ریاستوں کے درمیان پانی کی تقسیم میں جاری تنازعہ کے حل کے لئے علحدہ ٹریبونل کے قیام کی خواہش کی ہے۔ انہوں نے مرکز سے اپیل کی کہ آئندہ تین چار ہفتوں میں اعلیٰ سطحی کمیٹی کے تشکیل کے ذریعہ آبی تنازعہ کا حل تلاش کیا جائے۔ ہریش راؤ نے دیوادولا پراجکٹ کیلئے مرکز سے 103 کروڑ روپئے جاری کرنے کی درخواست کی۔ کرشنا کے پانی کی تقسیم میں تلنگانہ کو مناسب حصہ داری اور تلنگانہ کے آبپاشی پراجکٹس کی تکمیل کیلئے مرکز سے امداد کے حصول کے سلسلہ میں ہریش راؤ نئی دہلی کے دورہ پر ہیں۔

TOPPOPULARRECENT