Saturday , January 20 2018
Home / سیاسیات / کرناٹک اسمبلی میں کانگریس ایم ایل اے کی گرفتاری کا مطالبہ

کرناٹک اسمبلی میں کانگریس ایم ایل اے کی گرفتاری کا مطالبہ

بنگلور ۔ 4 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کرناٹک اسمبلی میں اپوزیشن بی جے پی ارکان نے حکمراں جماعت کانگریس کے ایم ایل اے جنہیں اپنے دیگر 6 ساتھیوں کے ساتھ فوجداری معاملہ کا سامنا ہے جو نصف شب کے وقت ایک شراب خانے میں ہوئی جھڑپ کے دوران دو پولیس کانسٹیبلس کی پٹائی کے بعد درج کیا گیا۔ اس معاملہ کو اٹھاتے ہوئے بی جے پی قائد جگدیش شیٹر نے کہا کہ کا

بنگلور ۔ 4 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کرناٹک اسمبلی میں اپوزیشن بی جے پی ارکان نے حکمراں جماعت کانگریس کے ایم ایل اے جنہیں اپنے دیگر 6 ساتھیوں کے ساتھ فوجداری معاملہ کا سامنا ہے جو نصف شب کے وقت ایک شراب خانے میں ہوئی جھڑپ کے دوران دو پولیس کانسٹیبلس کی پٹائی کے بعد درج کیا گیا۔ اس معاملہ کو اٹھاتے ہوئے بی جے پی قائد جگدیش شیٹر نے کہا کہ کانگریس ایم ایل اے وجے آنند کیش پناور کا رویہ انتہائی قابل اعتراض اور قابل مذمت تھا اور مطالبہ کیا کہ اسے فوری گرفتار کیا جائے جبکہ انہوں نے حکومت پر وجے آنند کا دفاع کرنے کا الزام بھی عائد کیا۔

وجے آنند اور ان کے چھ ساتھیوں پر یہ الزام ہیکہ انہوں نے کانسٹیبلس کرن کمار اور پرشانت نائیک کو ایک اعلیٰ درجہ کے شراب خانے میں اس وقت زدوکوب کیا جب نصف شب گذرنے کے باوجود جاری پارٹی روکنے کی کوشش کی گئی۔ مسٹر شیئر نے کہا کہ حکومت وجے آنند کو گرفتار نہ کرتے ہوئے دراصل اس کا دفاع کررہی ہے۔ اس کے غیر ذمہ دارانہ برتاؤ سے پولیس فورس کی توہین ہوئی ہے۔ حکومت کا فرض ہیکہ وہ وجے آنند کو ڈھونڈ نکالے اور اس کے خلاف معاملہ درج کرے۔

شیئر نے کہا کہ اسپیکر کھوگوڈوتھمپاکو بھی وقفہ سوالات سے قبل اس معاملہ پر مباحثہ کروانا چاہئے کیونکہ یہ ایک سنگین معاملہ ہے۔ اس طرح ایوان میں شدید شوروغل پیدا ہوگیا جہاں وجے آنند اور اس کے چھ ساتھیوں کی گرفتاری کا مطالبہ شدت اختیار کر گیا جس کے بعد کرناٹک اسمبلی سیشن کو 7 جولائی تک ملتوی کردیا گیا۔ اس معاملہ کو وقفہ سوالات سے قبل اٹھانے کے مطالبہ پر وزیراعلیٰ سدارامیا نے کہا کہ اسمبلی کے آداب ہمیں بی جے پی سے سیکھنے کی ضرورت نہیں جن کے ارکان فحش فلم دیکھتے ہوئے پائے گئے تھے۔ یہ ریمارک دراصل اس واقعہ کی جانب اشارہ تھا جب کرناٹک میں بی جے پی کی حکومت کے دوران کچھ ایم ایل ایز اپنے موبائیل فون پر فحش فلم کے حصے دیکھتے ہوئے پائے گئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT