Wednesday , May 23 2018
Home / Top Stories / کرناٹک الیکشن۔ کسی کوبھی واضح اکثریت نہیں‘ کانگریس ‘ جے ڈی ( ایس) اور بی جے پی کے وفود کی گورنر سے ملاقات

کرناٹک الیکشن۔ کسی کوبھی واضح اکثریت نہیں‘ کانگریس ‘ جے ڈی ( ایس) اور بی جے پی کے وفود کی گورنر سے ملاقات

بنگلورو۔کرناٹک میں مخلو ط اسمبلی کے اشارے ملنے کے ساتھ ہی سیاسی ڈرامہ شروع ہوگیا ہے۔ کانگریس نے منگل کے روز جنتا دل ( سکیولر) کی حمایت کا اعلان کیاتاکہ وہ حکومت بناسکے اور جنوبی ہند میں بی جے پی کے داخلہ پر روک لگا سکے۔

کرناٹک کے 224میں سے 222اسمبلی حلقوں پر رائے دہی کرائی گئی تھی جبکہ دو سیٹوں پر رائے دہی کو ملتوی کردیاگیا تھا‘ الیکشن کمیشن سے حاصل ڈاٹا کے مطابق بی جے پی 104سیٹوں پر سمٹتی نظر آرہی ہے۔

جادوائی نمبر کے لئے بی جے پی کے پاس 8سیٹوں کی کمی دیکھی جارہی ہے جبکہ کوئی بھی بی جے پی کا ساتھ دینے کے لئے تیار دیکھائی نہیں دے رہا ہے۔کانگریس کے پاس77سیٹیں جبکہ جے ڈی( ایس)38سیٹوں پر جیت حاصل کرتی نظر آرہی ہے ۔

تین سیٹوں پر آزاد امیدوار کامیا ب ہوتے دیکھائی دے رہے ہیں۔جے ڈی ( ایس) لیڈر دانش علی نے کہاکہ جے ڈی ایس اور کانگریس ساتھ ملکر بی جے پی کو کرناٹک سے بیدخل کرنے کاکام کریں گے۔

کانگریس مدد کرے گی یا پھر مدد مانگے گی اس پر سے پردہ اٹھ گیا ہے اور کانگریس پارٹی نے باضابطہ مکتوب کے ذریعہ جے ڈی ( ایس ) کی مدد کرنے کی پیشکش کی ہے اورساتھ میں کمارا سوامی کو کو چیف منسٹر بنانے کی بھی پیشکش کردی ہے۔

کمارا سوامی اور اننت کمار ہیگڈے دونوں نے گورنر کرناٹک سے وقت مانگا ہے تاکہ حکومت بنانے کا دعوی پیش کریں۔غلام نبی آزاد نے واضح کردیا ہے کہ ہم نے شروعات میں ہی جے ڈی( ایس) سربراہ ایچ ڈی دیوی گوڑہ اور ان کے بیٹے سابق چیف منسٹر ایچ ڈی کمارا سوامی سے بذریعہ فون بات کرتے ہوئے حکومت بنانے میں ان کی مدد کرنے کی پیشکش کردی ہے۔

جے ڈی ( ایس) کے وفد کی 5:30بجے ملاقات متوقع ہے۔

جبکہ کرناٹک میں بی جے پی کے چیف منسٹر امیدوار بی ایس یدارپا بھی دعوی کررہے ہیں کہ وہ حکومت بنائیں گے ۔ بی جے پی کا کہنا ہے کہ وہ 5بجے کے قریب گورنر سے ملاقات کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT