Tuesday , December 11 2018

کرناٹک ریاستی کابینہ میں توسیع ملتوی

کانگریس حکومت کو پارٹی ہائی کمان کی ہدایت

کانگریس حکومت کو پارٹی ہائی کمان کی ہدایت

بیدر۔/21مئی، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) لوک سبھا انتخابات میں شکست سے پریشان حال کانگریس پارٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ ریاست کابینہ میں توسیع ، بورڈ اور کارپوریشن پر نامزدگیوں کے بشمول تمام سرگرمیوں کو عارضی طور پر روک دیا جائے۔ ریاست میں کانگریس پارٹی کو15 سے کم نشستوں پر کامیابی حاصل ہوئی تو کابینہ میں توسیع نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ اگر پارٹی کو زیادہ نشستوں پر کامیابی حاصل ہوتی تو فوراً کابینہ میں ردوبدل کیا جاتا ہے لیکن کانگریس کو صرف 9نشستوں پر کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ آنے والے دو تین مہینوں میں کابینہ میں توسیع یا نامزدگیوں کو روک دینے پارٹی ہائی کمان نے ہدایت دی ہے۔ کانگریس کے ذرائع نے بتایا کہ ریاستی کابینہ میں 3عہدے خالی ہیں۔ ریاستی وزیر پرکاش بگیری لوک سبھا کیلئے منتخب ہوئے ہیں۔ اس طرح جملہ چار وزراء کو شامل کیا جاتا ہے۔ لوک سبھا انتخابات میں پارٹی کی شکست کیلئے ذمہ دار پانچ تاچھ وزراء کو علحدہ کرکے نئے وزراء کو شامل کیا جاتا ہے۔

اسی دوران چیف منسٹر کرناٹک مسٹر سدرامیا اور صدر کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی پرمیشور نے دہلی سے واپسی کے بعد اخبار نویسوں کو بتایا کہ آنے والے دنوں میں پارٹی کو مضبوط بننا ہے۔ شکست سے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ ہم نے 10سال تک بہتر حکومت کی ہے۔ عوام تبدیلی کی خواہش رکھتے تھے اسی وجہ سے کانگریس کو شکست ہوئی ہے۔ لوک سبھا انتخابات میں ملک بھر میں کانگریس پارٹی کی کارکردگی ناقص رہی ہے۔ شریمتی سونیا گاندھی مایوس ہوگئی ہیں۔ پرمیشور اور سدرامیا نے سونیا گاندھی سے ملاقات کرکے تفصیلی طور پر بات چیت کی ہے۔ کانگریس پارٹی اقتدار کے پیچھے جانے والی پارٹی نہیں ہے بلکہ عوامی مسائل کو حل کرنے والی پارٹی ہے۔ چیف منسٹر سدرامیا کے بیان سے صاف ظاہر ہورہا ہے کہ آنے والے چند مہینوں تک کابینہ میں کوئی ردوبدل نہیں ہوگا اور نہ ہی بورڈ اور کارپوریشن کیلئے نامزدگیاں کی جائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT