Wednesday , December 13 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کرناٹک سے کانگریس کو بے دخل کرنے کا عزم

کرناٹک سے کانگریس کو بے دخل کرنے کا عزم

بنگلورو۔13؍اپریل(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ریاستی بی جے پی صدارت پر فائز سابق وزیراعلیٰ بی ایس یڈیورپا نے 14اپریل کو ڈاکٹر امبیڈکر جینتی کے موقع پر پارٹی کی صدارت سنبھالنے کا اعلان کیا ہے۔ ریاستی بی جے پی صدارت کے عہدہ پر بی جے پی اعلیٰ کمان نے یڈیورپا کو اسی شرط پر مقرر کیا ہے کہ 2018کے اسمبلی انتخابات میں وہ پارٹی کو دوبارہ برسر اقتدار لائیں۔ یڈیورپا نے اس شرط کو تسلیم کرتے ہوئے پارٹی کی صدارت کا عہدہ منظور کیا ہے۔ 2008 میں پہلی بار یڈیورپا نے جنوبی ہند میں بی جے پی کیلئے اقتدار کا راستہ ہموار کیا تھا، پارٹی اعلیٰ کمان نے انہیں ہدایت دی ہے کہ تمام پارٹی کارکنوںاور قائدین کو اعتماد میں لے کر وہ کرناٹک میں پارٹی کو اقتدار پر لانے کی جدوجہد میں لگ جائیں۔ اس دوران یڈیورپا نے پارٹی کارکنوں اور قائدین کی طرف سے مبارکبادیاں قبول کرتے ہوئے کہاکہ اگلے دو سال میں پارٹی کو اس قدر منظم کیا جائے گاکہ کرناٹک کو 2018 میں کانگریس سے پاک کردیا جائے گا۔ ڈالرس کالونی میں اپنی رہائش گاہ پر پارٹی کارکنوں سے مخاطب ہوکر یڈیورپا نے کہاکہ وزیراعظم نریندر مودی اور پارٹی صدر امیت شا کی یہ کوشش ہے کہ ملک کی تمام ریاستوں میں بی جے پی برسر اقتدار آئے ، کرناٹک میں اس خواب کو شرمندۂ تعبیر کرنے کی ذمہ داری اب ان کے کندھوں پر ہے۔ اب سے کرناٹک میں کانگریس کو بے دخل کرنے اور بی جے پی کو اقتدار پر لانے کے چیلنج کو اپنا کر وہ آگے بڑھیں گے۔ یڈیورپا نے پارٹی کارکنوں اور عوام سے اپنی پچھلی کوتاہیوں کیلئے معذرت خواہی کرتے ہوئے کہاکہ پارٹی کے تمام لیڈران کو ساتھ لے کر وہ ریاست بھر کا دورہ کریں گے۔ ریاستی حکومت کی ناکامیوں اور مرکزی حکومت کی کامیابیوں کوعوام کے سامنے رکھ کر عوام میں بی جے پی کیلئے اعتماد سازی کی جدوجہد میں لگ جائیں گے۔ یڈیورپا نے کہا کہ اب سے کسی بھی وقت ریاستی اسمبلی انتخابات کا اعلان کردیا جائے تو بی جے پی ان کا سامنا کرنے کیلئے پوری طرح تیار ہے۔ انہوںنے کہا کہ پارٹی کی قومی قیادت کی توقعات سے آگے بڑھ کر ریاست میں بی جے پی کو اقتدار پر لایا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT