Wednesday , September 26 2018
Home / Top Stories / کرناٹک میں اقلیتی ووٹوں کی تقسیم سے بی جے پی کامیابی حاصل کریگی

کرناٹک میں اقلیتی ووٹوں کی تقسیم سے بی جے پی کامیابی حاصل کریگی

ہندو ووٹ بینک کو مستحکم کیا جا رہا ہے ‘اصل مقابلہ اقلیتی خوشامد و ہندوتوا کے مابین : سبرامنین سوامی
نئی دہلی 22 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) بی جے پی لیڈر سبرامنین سوامی نے آج یہ بالکل واضح کردیا کہ ان کی پاری ( بی جے پی ) کرناٹک اسمبلی انتخابات میں اقلیتی اور مسلم ووٹوں کی تقسیم اور ہندو ووٹوں کے متحد ہونے کی وجہ سے کامیابی حاصل کریگی اور حکومت بنائیگی ۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ تین طلاق پر امتناع سے متعلق قانون کی وجہ سے مسلم خواتین کے ووٹوں کی خاطر خواہ تعداد بھی بی جے پی کو مل سکتی ہے اور شیعہ برادری اور چھوٹے اقلیتی گروپس بھی بی جے پی کے حق میں ووٹ استعمال کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان خواتین بی جے پی کی شکر گذار ہیں کیونکہ اس نے تین طلاق کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہاں تک کہ شیعہ برادری اور بوہرہ برادری اور دوسرے چھوٹے گروپس بھی بی جے پی کو ووٹ دینگے ۔ ایسے میں اقلیتی ( مسلم ) ووٹ تقسیم ہوجائیگا ۔ اکثریتی ووٹ بینک کو مستحکم کیا جارہا ہے ۔ ایسے میں وہ سمجھتے ہیں کہ اقلیتی ووٹوں کی تقسیم کی بنیاد پر ہی کرناٹک میں ہم کامیابی حاصل کرلیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ہوسکتا ہے کہ اقلیتی طبقہ کے مرد کانگریس کے حق میں ووٹ دیں تاہم خواتین ہمارے لئے ووٹ دے رہی ہیں۔ بی جے پی لیڈر نے کہا کہ ان کی پارٹی کو یقین ہے کہ اقلیتی ووٹوں کو تقسیم کرنے اور ہندو ووٹ مستحکم کرنے کے بعد بی جے پی 125 تا 130 نشستوں پر کامیابی حاصل کریگی ۔اس استفسار پر کہ کرناٹک انتخابات کو چیف منسٹر سدارامیا اور وزیر اعظم نریند رمودی کے مابین مقابلہ قرار دیا جا رہا ہے سبرامنین سوامی نے کہا کہ ایسا نہیں ہے بلکہ یہ اقلیتوں کی خوشامد اور ہندوتوا کے مابین مقابلہ ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ لڑائی اقلیتوں کی خوشامد اور ہندوتوا کے مابین ہے اور کچھ نہیں۔ یہ ہندوستانی سیاست کا نیا عنصر ہے ۔ انہیں سدارامیا اور نریندر مودی کے مابین کوئی مقابلہ نظر نہیں آتا اور یہی حقیقت ہے ۔

TOPPOPULARRECENT