Monday , January 22 2018
Home / اضلاع کی خبریں / کرناٹک میں گنے کی قیمت 2500 روپئے فی ٹن مقرر

کرناٹک میں گنے کی قیمت 2500 روپئے فی ٹن مقرر

عدالت کے فیصلہ پر شکر فیاکٹریز کو نوٹس،فی الفور بقایا ادا کرنے کی ہدایت

عدالت کے فیصلہ پر شکر فیاکٹریز کو نوٹس،فی الفور بقایا ادا کرنے کی ہدایت

بیدر 15 نومبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)ریاستی حکومت کی جانب سے سال گذشتہ مقرر کردہ گنے کی قیمت فی ٹن 2500 روپئے ادا کرنے شکر فیاکٹریوں کو ہدایت دی گئی ہے ۔ ہائی کورٹ نے بھی گنے کی قیمت مقرر کرنے حکومت کے فیصلے کو درست قرار دیا ہے ۔ اس لئے شکر فیاکٹریاں فی الفور بقایا رقومات ادا کرے ۔ ریاستی وزیر کوآپریٹیو اور شکر ایچ ایس مہا دیو پرساد نے یہ بات بتائی ۔ حکومت نے فی ٹن گنے کیلئے جو قیمت مقرر کی تھی اس کو چیلنج کرتے ہوئے جنوبی ہندوستان کی شکر فیاکٹریوں کی تنظیم نے عدالت میں درخواست کی تھی۔ دھار واڑ ہائی کورٹ نے اس درخواست پر سماعت کے بعد فیصلہ دیا ہے ۔ اس فیصلے کے مطابق حکومت کی جانب سے مقررہ کردہ قیمت گنا کسانوں کو ادا کرنے عدالت نے فیصلہ دیا ہے ۔ عدالت کے فیصلے کے پیش نظر تمام شکر فیاکٹریوں کے نام نوٹس جاری کر کے بقایا رقم فی الفور ادا کرنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔وزیر شکر مہا دیو پرساد نے مزید بتایا کہ ہائیکورٹ کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے شکر فیاکٹریوں کے مالکین رٹ داخل کرسکتے ہیں اس لئے ہائیکورٹ میں کیویٹ داخل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس مسئلہ پر ریاست کے ایڈوکیٹ جنرل سے بات چیت کی جارہی ہے۔ ریاست میں کوآپریٹیو شکر فیاکٹریاں جیسے مئیں شوگر، بھدراوتی شکر فیاکٹری، پانڈہ پور کوآپریٹیو شکر فیاکٹری اور میسور کی شکر فیاکٹری نے ہی حکومت کی مقرر کردہ فی ٹن 250 روپئے قیمت ادا کی ہے ۔ مابقی شکر فیاکٹریوں میں صرف ایف آر پی قیمت ہی ادا کی گئی ہے ۔ یہ تمام فیاکٹریوں میں جملہ 1802 کروڑ روپئے ادا کرنا ہے۔ ہائیکورٹ کے حکم کے مطابق ریاست کے تمام شکر فیاکٹریوں کو 2500 روپئے ادا کرنا پڑے گا ۔ حکومت بھی کسانوں کی بقایا رقم دلانے کیلئے اقدامات کررہی ہے ۔ وزیر شکر نے بتایا کہ گذشتہ سال مرکزی حکومت نے ایف آر پی فی ٹن کیلئے 2100 روپئے شکر فیاکٹریوں کو ادا کرنے ہوں گے ۔ شمالی کرناٹک علاقے میں گنے کی ریکوری 12 فیصد سے زائد ہے اس لئے فی ٹن گنے کی قیمت 2700 سے 2900 روپئے کسانوں کو حاصل ہوگی ۔ گذشتہ مرتبہ حکومت نے شکر فیاکٹریوں کیلئے گنا سپلائی ٹیکس اور ویاٹ ٹیکس میں رعایت دی تھی 100 روپئے زائد ادا کئے تھے۔ اس سال اس طرح کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا ۔ سال گذشتہ خصوصیت کے ساتھ فی ٹن گنے کیلئے 150 روپئے دیئے گئے تھے ۔ اس سال اس تعلق سے حکومت نے کوئی فیصلہ نہیں کیا۔

TOPPOPULARRECENT