Tuesday , November 21 2017
Home / Top Stories / کرناٹک کے سابق چیف منسٹر یدی یورپا کیخلاف کرپشن کے الزامات کااحیاء

کرناٹک کے سابق چیف منسٹر یدی یورپا کیخلاف کرپشن کے الزامات کااحیاء

ہائیکورٹ سے بری کئے جانے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کرنے کانگریس حکومت کا فیصلہ

بنگلورو۔ 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) کرناٹک بی جے پی کا صدر نامزد کئے جانے کے اندرون چند یوم سابق چیف منسٹر بی ایس یدی یورپا کے خلاف ایک نئی مشکل کھڑی کردی گئی ہے جبکہ کانگریس حکومت نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ کرپشن کیس میں ہائیکورٹ سے بری کئے جانے کے خلاف سپریم کورٹ میں ایک اپیل دائر کی جائے۔ وزیر قانون مسٹر آئی جیہ چندرا نے بتایا کہ لوک ایوکت (ادارہ انسداد رشوت ستانی) کی سفارش پر حکومت نے اپیل دائر کرنے کے لئے 24 جنوری کو احکامات جاری کئے تھے۔ انھوں نے کہاکہ لوک ایوکت کی سفارش کے پس منظر میں محکمہ داخلہ نے کارروائی کرتے ہوئے یہ احکامات جاری کئے ہیں اور یڈی یورپا کے خلاف تقریباً 15 کیسوں میں ایک اپیل دائر کی جائے گی۔ سدارامیا حکومت نے یدی یورپا کی چوتھی مرتبہ بی جے پی کا ریاستی صدر بنانے کے اندرون 2 ہفتے یہ قدم اٹھایا ہے جنھوں نے سال 2018 ء کے اسمبلی انتخابات میں 224 کے منجملہ 150 نشستوں پر کامیابی کا نشانہ مقرر کیا ہے۔

جاریہ سال جنوری میں ہائیکورٹ سے راحت دیئے جانے پر لنگایت برادری کے طاقتور لیڈر سے بی جے پی کا مقدر وابستہ کردیا گیا جبکہ قواعد کی خلاف ورزی کرتے ہوئے اراضیات مختص کرنے کے الزامات پر لوک ایوکت پولیس نے یڈی یورپا کے خلاف 15 کیسیس درج کئے ہیں۔ لیکن ہائیکورٹ نے منسوبہ تمام الزامات کو کالعدم قرار دیا تھا۔ تاہم بی جے پی ریاستی صدر کی حیثیت سے یدییورپا کی واپسی کے فوری بعد چیف منسٹر سدارامیا نے یہ اشارہ دیا تھا کہ حکومت بہت جلد ایک مرافعہ سپریم کورٹ میں داخل کرے گی اور محکمہ قانون اس خصوص میں قطعی فیصلہ کرے گا۔ واضح رہے کہ سال 2011 ء میں کرپشن کے الزامات عائد ہونے پر یدی یورپا نے بحیثیت چیف منسٹر استعفیٰ دے دیا تھا۔ بعدازاں بی جے پی سے ترک تعلق کرکے نئی پارٹی کرناٹک جنتا پارٹی قائم کی تھی۔ لیکن 2013 ء کے اسمبلی انتخابات میں نئی پارٹی کو کوئی فائدہ حاصل تو نہیں ہوا البتہ بی جے پی کیلئے زبردست نقصان دہ ثابت ہوئی اور وہ دوبارہ بی جے پی میں اُس وقت شامل ہوگئے جب 2014 ء کے پارلیمانی انتخابات سے قبل نریندر مودی کو وزارت عظمیٰ کے امیدوار کی حیثیت سے اعلان کیا گیا لیکن یدی یورپا بی جے پی کے ریاستی صدر بننے کے لئے اپنی خواہش کو چھپا نہیں سکے اور ان کے منفرد اسٹائیل کے باعث حال ہی میں عہدہ سپرد کردیا گیا اور بی جے پی کا ریاستی صدر نامزد ہونے کے بعد سدارامیا حکومت کے خلاف جارحانہ تیور اختیار کرلیا جس پر حکومت نے بھی انھیں سیاسی طور پر بے اثر کرنے کے لئے کرپشن کیسوں کے احیاء کا فیصلہ کیا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT