Wednesday , January 24 2018
Home / دنیا / کریمیا پارلیمنٹ کا فیصلہ غیرقانونی، عبوری وزیراعظم یوکرین

کریمیا پارلیمنٹ کا فیصلہ غیرقانونی، عبوری وزیراعظم یوکرین

بروسلز ۔ 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) یوکرین کے عبوری وزیراعظم ارسنڈلی یاتسنیوک نے کریمیا میں مقامی پارلیمنٹ کی روس کا حصہ بننے کی درخواست کو غیرقانونی قرار دیا۔ انہوں نے یوروپی یونین قائدین کے ساتھ جاری بحران پر ہنگامی اجلاس کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک غیرقانونی فیصلہ ہے۔ انہوں نے روسی حکومت پر زور د

بروسلز ۔ 6 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) یوکرین کے عبوری وزیراعظم ارسنڈلی یاتسنیوک نے کریمیا میں مقامی پارلیمنٹ کی روس کا حصہ بننے کی درخواست کو غیرقانونی قرار دیا۔ انہوں نے یوروپی یونین قائدین کے ساتھ جاری بحران پر ہنگامی اجلاس کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ یہ ایک غیرقانونی فیصلہ ہے۔ انہوں نے روسی حکومت پر زور دیا کہ وہ علحدگی پسندی کی حمایت کرنے والوں کی تائید نہ کریں۔ کریمیا میں موافق روس قانون سازوں نے صدر روس ولادیمیر پوٹن سے درخواست کی ہیکہ کریمیا کو روس کا حصہ بنا لیا جائے۔ اس کے علاوہ 16 مارچ کے ریفرنڈم کے تعلق سے بھی سوالات اٹھائے ہیں۔ دوسری طرف روسی فورس نے کریمیا پر اپنی گرفت مضبوط کرلی ہے۔ اس ریفرنڈم کے ذریعہ کریمیا کے شہریوں سے یہ پوچھا جائے گا کہ کیا وہ 1992ء سے پہلے کے دستور کی واپسی کے خواہاں ہے جس کے ذریعہ اس علاقہ کو پوری اختیاری دی گئی تھی۔ عبوری وزیراعظم یوکرین نے کہا کہ کریمیا یوکرین کا اٹوٹ حصہ ہے اور رہے گا۔ انہوں نے اس نام نہاد ریفرنڈم کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اس کی کوئی بنیاد نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ یوروپی یونین قائدین کے ساتھ کھلے اور واضح مذاکرات ہوئے، جس میں جاری بحران کا پرامن سیاسی حل تلاش کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT