کریم نگر میں ٹیچرس قائدین پر مقدمات

اراضی تنازعہ کی تحقیقات کرنے پولیس کو عدالت کی ہدایت

اراضی تنازعہ کی تحقیقات کرنے پولیس کو عدالت کی ہدایت
کریم نگر۔/27ڈسمبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) زمین کی فراہمی کے سلسلہ میں ایک ٹیچرس یونین کے قائدین پر عدالت کی ہدایت پر مقدمات درج ہوچکے ہیں۔ شکایت کنندگان کے وکیل بدم نرسمہا ریڈی کی اطلاع کے مطابق نرسمہا ریڈی کی اہلیہ سبھدرا سرکاری ٹیچر ہیں ضلع مستقر میں پداما دیوالیم کے مقام پر یونائٹیڈ ٹیچرس فیڈریشن ( یو ٹی ایف ) ضلع سوسائٹی کی جانب سے زمین خرید کر اس کے پلاٹس کی تقسیم عمل میں لائی گئی اور فروخت کئے گئے۔ ضلع یونین سابق کنوینر سی ایچ پرتاپ راؤ نے نرسمہا ریڈی سے ربط پیدا کرنے پر زمین کا معائنہ کرنے کے بعد10اپریل 2006 کو 4لاکھ 30ہزار روپئے میں 283مربع گز زمین خریدی کرنے کا معاہدہ کرلیا اور اڈوانس ایک لاکھ روپئے حاصل کرلیا اور پرتاپ ریڈی نے کاغذ لکھ کر دے دیا۔ بعدازاں یونین کے ذمہ داران پی کرشنا مورتی کو ایک لاکھ وینو سری کو ایک لاکھ ، پرتاب راؤ کو مزید ایک لاکھ 30ہزار روپئے نرسمہا ریڈی نے ادا کئے لیکن پھر بھی رجسٹریشن نہ کرنے پر پرتاب ریڈی نے 30ہزار روپئے مزید ادا کئے تب سبھدرا کے نام جی پی اے کم سیل دستاویز کو رجسٹریشن کرواکر دیا گیا۔ مذکورہ زمین کو مسطح کروالئے جانے پر ایک شخص نے رکاوٹ ڈالی اور کہا کہ8مئی 1985ء کو اس وقت کے یو ٹی ایف سکریٹری ٹی سرینواس راؤ کے ذریعہ خرید کر رجسٹریشن کروالیا ہے۔ اس تعلق سے نرسمہا ریڈی یو ٹی ایف کا موجودہ رکن عاملہ ذمہ دار کے وینکٹیشورلو، پرنسپال اے پی سنیل ویلفیر ریزیڈنشیل اسکول منتھنی اشوک یوٹی ایف ضلع صدر پر شکایت کرنے پر انہوں نے تیقن دیا کہ مسئلہ کا حل نکالا جائے گا۔ لیکن یکسوئی نہ کرتے ہوئے غیر ذمہ دارانہ طرز اپناتے ہوئے کریم نگر فرسٹ کلاس مجسٹریٹ کی عدالت میں مقدمہ دائر کرنے پر جج اظہر حسین نے ان الزامات میں شامل پرتاب راؤ، کرشنا مورتی، وینو سری، ڈانیل، اشوک، وینکٹشیورلو پر مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کرنے کیلئے ٹو ٹاؤن پولیس کو احکامات دیئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT