Tuesday , January 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / کسانوں کی خوشحالی ریاست تلنگانہ کا اولین فرض

کسانوں کی خوشحالی ریاست تلنگانہ کا اولین فرض

نیالکل /20 جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) نیالکل منڈل مستقر میں کسانوں کے میلہ سے ریاستی وزیر زراعت تلنگانہ پوچا سرینواس ریڈی نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ریاست تلنگانہ کے زرعی کسانوں کی خوشحالی سے ہی ریاست تلنگانہ کی ترقی ممکن ہے ۔ وزیر اعلی کے سی آر نے تلنگانہ کے کسانوں کیلئے ایک منصوبہ تیار کیا جس کے تحت کسانوں کو زرعی لون دیا جائے گا ۔ ا

نیالکل /20 جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) نیالکل منڈل مستقر میں کسانوں کے میلہ سے ریاستی وزیر زراعت تلنگانہ پوچا سرینواس ریڈی نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ریاست تلنگانہ کے زرعی کسانوں کی خوشحالی سے ہی ریاست تلنگانہ کی ترقی ممکن ہے ۔ وزیر اعلی کے سی آر نے تلنگانہ کے کسانوں کیلئے ایک منصوبہ تیار کیا جس کے تحت کسانوں کو زرعی لون دیا جائے گا ۔ انہوں نے موضع مامڑگی میں گنے کے کاشتکاروں اور اعلی عہدیداروں کے اجلاس سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ صحیح بارش کی ناکافی کے باعث زرعی کسانوں کو راحت نہیں مل رہی ہے ۔ حکومت تلنگانہ زرعی کسانوں کی خوشحالی کیلئے کروڑوں روپیوں کے قرضہ جات کو معاف کردئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپین تین روزہ دورہ مہاراشٹرا ریاست سے زرعی فصلوں کے نئے طریقہ کار کو اپناتے ہوئے تلنگانہ میں اس پالیسی کو نفاذ دیا جائے گا ۔ شوگر فیاکٹریوں کی دھوکہ دہی سے غڑیب کسانوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ انہوں نے موضع بسنت پور کے قریب واقع پروفیسر جئے شنکر زرعی مرکز کا معائنہ کیا اور طلباء سے ملاقات کرتے ہوئے کہا کہ طالبات زرعی شعبہ اگریکلچر پر توجہ مرکوز کریں تاکہ سو فیصد کامیاب ہوکہ اگریکلچر میں ریاست تلنگانہ اول مقام پر پہونچے ۔ ایم پی ظہیرآباد بی بی پاٹل نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ پارلیمانی ظہیرآباد میں کسانوں کیلئے تخم ریزی کیلئے لاکھوں روپیوں کو خرچ کر رہی ہے ۔ غریب کسانوں کے ہر مسائل کی یکسوئی کیلئے وزیر اعلی کوشاں ہیں ۔ بعد ازاں انہوںنے اگریکلچر یونویرسٹی کے طلباء کے ساتھ کھانا کھایا اور ان کے تعلیمی مشکلات و دریافت کیا ۔ اس موقع پر نظام آباد رورل رکن اسمبلی ودیا ساگر باجی ریڈی ایم پی بی بی پاٹل کملا بائی صدر نشین منڈل پریشد چیرمین بلدیہ لاوینا چندو محمد یعقوب صدر ٹاون ٹی آر ایس پارٹی نوین نامہ کرن رکن بلدیہ پانڈو رنگاریڈی چندرایا کے علاوہ کثیر تعداد میں ٹی آر ایس قائدین موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT