Monday , December 18 2017
Home / شہر کی خبریں / کسانوں کے مسائل پر آج کانگریس کا ’’چلو اسمبلی‘‘ احتجاج

کسانوں کے مسائل پر آج کانگریس کا ’’چلو اسمبلی‘‘ احتجاج

کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کی حکومت ذمہ دار ہوگی: کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی
حیدرآباد۔ 26 اکتوبر (سیاست نیوز) کانگریس کے سینئر رکن اسمبلی و سابق ریاستی وزیر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ ماموں اور وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ بھانجے پر مجوزہ چلو اسمبلی احتجاجی ریالی کو ناکام بنانے کی سازش کا الزام عائد کیا۔انہوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کسانوں کے مسائل حل کرنے میں بری طرح ناکام ہوگئی۔ زرعی شعبہ بحران کا شکار ہے اور اب تک 3,500 کسانوں نے مشکلات سے دلبرداشتہ ہوکر خودکشی کرلی۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس نے کسانوں کو درپیش مسائل کو اجاگر کرنے کیلئے 27 اکتوبر کو گاندھی بھون سے چلو اسمبلی احتجاجی ریالی منظم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس ریالی سے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ اور وزیر اُمور مقننہ ہریش راؤ خوف زدہ ہوگئے ہیں۔ ان کی مخالفت خود اس بات کا واضح اشارہ ہے کہ ریالی کو ناکام بنانے کی سازش کی جارہی ہے۔ کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کہا کہ 27 اکتوبر کو اگر کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش آیا تو اس کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ کئی پابندیاں عائد کئے جانے کے باوجود یہ احتجاجی ریالی پروگرام کے مطابق منظم کی جائے گی۔ انہوں نے حکومت سے کسانوں کے ساتھ انصاف کا مطالبہ کیا اور پوچھا ہے کہ کیا اگر کانگریس پارٹی کسانوں کے مفاد میں بات کررہی ہے تو یہ غلط ہے؟ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر پرگتی بھون سے باہر نکلیں تو انہیں عوامی مسائل بالخصوص کسانوں کو درپیش مشکلات کا اندازہ ہوگا۔ کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی نے کانگریس قائدین اور کسانوں سے اپیل کی ہے کہ اگر انہیں ریالی میں شرکت سے روکا جائے تو وہ اسی مقام پر احتجاجی دھرنا منظم کریں۔انہوں نے گرفتار کانگریس قائدین کی غیرمشروط رہائی کا بھی مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT