Wednesday , June 20 2018
Home / ہندوستان / کسی بھی حکومت نے ایک ماہ میں ہمارے مساوی کام نہیں کیا:کجریوال

کسی بھی حکومت نے ایک ماہ میں ہمارے مساوی کام نہیں کیا:کجریوال

نئی دہلی27 جنوری (سیاست ڈاٹ کام )عام آدمی پارٹی کے سابق قائد ونود کمار بنی کے پارٹی پر تبصرہ کے خلاف رد عمل ظاہر کرتے ہوئے چیف منسٹر دہلی ارویند کجریوال نے کہا کہ حکومت بچانے کیلئے انہیں سیاسی کھیل کھیلنے کی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ایک ماہ کے عرصہ میں کسی بھی حکومت نے اتنا کام نہیں کیا جتنا ان کی حکومت نے کیا ہے۔ انہو ںنے کہا

نئی دہلی27 جنوری (سیاست ڈاٹ کام )عام آدمی پارٹی کے سابق قائد ونود کمار بنی کے پارٹی پر تبصرہ کے خلاف رد عمل ظاہر کرتے ہوئے چیف منسٹر دہلی ارویند کجریوال نے کہا کہ حکومت بچانے کیلئے انہیں سیاسی کھیل کھیلنے کی ضرورت نہیں ۔ انہوں نے دعوی کیا کہ ایک ماہ کے عرصہ میں کسی بھی حکومت نے اتنا کام نہیں کیا جتنا ان کی حکومت نے کیا ہے۔ انہو ںنے کہا کہ وہ جانتے ہیں کہ دہلی ہنوز خواتین کیلئے محفوظ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپنی ذمہ داریوں سے فرار حاصل نہیں کررہے ہیں جیسا کہ بنی نے پارٹی پر الزام عائد کیا ہے ۔ دریں اثناء بی جے پی قائد ہرش وردھن نے آج کہا کہ باغی رکن اسمبلی کے اٹھائے ہوئے مسائل سنگین نوعیت کے ہیں۔ عام آدمی پارٹی کو خود احتسابی کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے عوام عام آدمی پارٹی سے
جواب چاہتے ہیں۔

کجریوال کو خود احتسابی کے بعد سوالات کے جواب دینے چاہئے تاہم ونود کمار بنی کے پارٹی سے اخراج کو انہوں نے عام آدمی پارٹی کا داخلی معاملہ قرار دیا۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے ریاستی وزیر قانون سومناتھ بھارتی کے خلاف حکومت کی کارروائی کا مطالبہ کیا۔ سکریٹریٹ میں کجریوال کے دفتر کے روبرو ہرش وردھن بی جے پی ارکان اسمبلی کے ساتھ ریاستی وزیر قانون کی برطرفی کا مطالبہ کرتے ہوئے دھرنا دے رہے ہیں۔ بی جے پی قائد نے کہا کہ وہ کجریوال کو ایک کھلا خط روانہ کرتے ہیںجس میں سومناتھ بھارتی کی برطرفی کا مطالبہ کیا گیا ہے کیونکہ مبینہ طور پر وہ آدھی رات کے دھاوے کی قیادت کررہے تھے اور ایک افریقی خاتون کو زدوکوب اور اس کے ساتھ بدسلوکی کی تھی۔ بی جے پی حال ہی میں اس مسئلہ پر دہلی کے لیفٹننٹ گورنر سے ملاقات بھی کرچکی ہے ۔ بعدازاں پارٹی نے اعلان کیا کہ ریاستی وزیر کے خلاف عوامی احتجاج کا آغاز کیا جائے گا۔دریں اثناء تنظیم کرپشن مخالف ہندوستان کے رضا کاروں نے بنی کے چیف منسٹر دہلی کے خلاف احتجاج میں شمولیت اختیار کرلی۔ ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے تنظیم نے کہا کہ بدسلوکی کرنے والے وزیر قانون کی برطرفی کے بجائے کجریوال نے بنی کے خلاف احتجاج کیا ہے یہ ایک ناانصافی ہے ۔ تنظیم کے رضاکار کجریوال کے خلاف بنی کے دھرنے میں تنظیم کے 50 کارکن شامل ہوں گے ۔

TOPPOPULARRECENT