Thursday , June 21 2018
Home / شہر کی خبریں / کسی بھی ملک یا قوم کی ترقی کا راز تعلیم میں مضمر

کسی بھی ملک یا قوم کی ترقی کا راز تعلیم میں مضمر

پی جی کالج عثمانیہ یونیورسٹی کی اسکالرس ڈے تقریب ، ڈاکٹر امبیڈکر کو خراج ، ڈاکٹر ٹی راجیا و دیگر کا خطاب حیدرآباد ۔ 12 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : ڈپٹی چیف منسٹر و وزیر صحت و طبابت ڈاکٹر ٹی راجیا نے کہا کہ کسی بھی ملک یا قوم کی ترقی کا

پی جی کالج عثمانیہ یونیورسٹی کی اسکالرس ڈے تقریب ، ڈاکٹر امبیڈکر کو خراج ، ڈاکٹر ٹی راجیا و دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 12 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : ڈپٹی چیف منسٹر و وزیر صحت و طبابت ڈاکٹر ٹی راجیا نے کہا کہ کسی بھی ملک یا قوم کی ترقی کا
راز تعلیم میں مضمر ہے اور بابائے قوم ڈاکٹر بی آر امبیڈکر نے اپنے تعلیمی مشن کو جاری رکھتے ہوئے ملک کے مختلف پہلوؤں پر ریسرچ کرتے ہوئے عثمانیہ یونیورسٹی سے ڈاکٹریٹ کی ڈگری حاصل کی اور ملک و قوم کا نام روشن کیا تھا ۔ ڈاکٹر ٹی راجیا آج پوسٹ گریجویٹ کالج آف لا عثمانیہ یونیورسٹی کے زیر اہتمام کالج ہذا میں منعقدہ ’ اسکالرس ڈے ‘ تقریب میں بحیثیت مہمان خصوصی مخاطب تھے ۔ انہوں نے ڈاکٹر امبیڈکر کی سماجی ، عوامی اور ملک کے لیے انجام دی گئی بے لوث خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ ڈاکٹر امبیڈکر ایک خوش اخلاق ، انصاف پسند اور بہترین قانون داں کے علاوہ اعلی صلاحیتوں کی حامل شخصیت تھے جنہیں 12 جنوری 1953 میں پوسٹ گریجویٹ کالج آف لا عثمانیہ یونیورسٹی کی جانب سے ڈاکٹریٹ کی ڈگری عطا کی گئی تھی اور اس ضمن میں ہر سال پوسٹ گریجویٹ کالج آف لا عثمانیہ یونیورسٹی کے زیر اہتمام کالج ہذا میں ’ اسکالرس ڈے ‘ تقاریب منعقد کی جاتی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر امبیڈکر نے دستور ہند میں نہ صرف دلتوں کو بلکہ ملک کے تمام طبقات کو تحفظات کی فہرست میں درج کر کے اپنی مدبرانہ صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آج ڈاکٹر امبیڈکر کے جیم مجسمے تنصیب کرنے کی ضرورت نہیں ہے جب کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ ڈاکٹر امبیڈکر کے بتائے ہوئے اصولوں پر عمل کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں برسر اقتدار ٹی آر ایس حکومت تلنگانہ کے تمام طبقات کی ترقی و فلاح و بہبود کو یقینی بناتے ہوئے ریاست کو سنہرے تلنگانہ میں تبدیل کرنے کی جدوجہد میں لگی ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آج اکثر طلباء صرف ڈگری حاصل کررہے ہیں لیکن ان میں قابلیت اور صلاحیتوں کا فقدان ہے جس کے نتیجہ میں وہ مسابقتی دوڑ میں آگے آنے سے محروم ہیں ۔ انہوں نے طلباء سے خواہش کی کہ وہ اپنے اسکل ڈیولپمنٹ کو پروان چڑھاتے ہوئے گروپ I اور گروپ II مسابقتی امتحانات میں حصہ لیں ۔ اس موقع پر انقلابی گلوکار غدر نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کی ملک و قوم کے لیے انجام دی گئی سماجی اور عوامی خدمات کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر امبیڈکر نے ملک کے سماجی ، معاشی ، تعلیمی سدھار کے لیے ساری دنیا کی لائبریریوں میں موجود کتب کا مطالعہ کیا تھا ۔ وہ ایک بہترین اور با صلاحیت قائد تھے جن کی تعلیمات اور قانون پر آج سارا ملک عمل پیرا ہے ۔ انہوں نے ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کو عثمانیہ یونیورسٹی کی جانب سے ڈاکٹریٹ کی ڈگری دئیے جانے پر امبیڈکر کو ماہر تعلیم اور بہترین قانون داں سے تعبیر کیا ۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک یا قوم کی ترقی تعلیم پر منحصر ہے ۔ آج ڈاکٹر امبیڈکر کے قانون پر موثر عمل آوری کی اشد ضرورت ہے ۔ اس موقع پر پرنسپل و ڈائرکٹر پوسٹ گریجویٹ کالج آف لا عثمانیہ یونیورسٹی ڈاکٹر جی گویند کمار نے مخاطب کرتے ہوئے کالج ہذا کی تفصیلی رپورٹ پیش کرتے ہوئے ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کو نظام دور حکومت میں 12 جنوری 1953 کو ڈاکٹریٹ کی ڈگری دی گئی تھی جو کالج کی تاریخ اور باعث فخر ہے ۔ اس موقع پر ہیڈ آف دی ڈپارٹمنٹ آف لا کالج عثمانیہ یونیورسٹی پروفیسر وائی وشنو پریا ، سابق پرنسپل پی جی سی ایل او یو ، پروفیسر جی منوہر راؤ ، ڈین فیکلٹی آف لا پروفیسر ایم راما راؤ نے بھی مخاطب کیا ۔ وائس پرنسپل پی جی سی ایل شریمتی ٹی اپرنا نے شکریہ ادا کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT