کشمیر:پنچایتی انتخابات کے اعلان کے بعد سے 4 پنچایت گھرنذرآتش

سری نگر ۔ 18 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) جموں وکشمیر میں پنچایتی انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے ساتھ جنوبی کشمیر میں نامعلوم افراد نے پنچایت گھروں کو آگ لگانا شروع کردیا ہے ۔ مقامی میڈیا کی رپورٹوں کے مطابق 16 ستمبر کو پنچایتی انتخابات کی تاریخوں کے باضابطہ اعلان سے لیکر اب تک 4 پنچایت گھروں میں آگ لگائی گئی ہے ۔ آگ کی ان وارداتوں میں پنچایت گھروں کے ان پختہ ڈھانچوں کو جزوی نقصان پہنچا ہے ۔ رپورٹوں کے مطابق پلوامہ اور شوپیان اضلاع میں پیر اور منگل کی درمیانی رات کے دوران تین مختلف علاقوں میں تین پنچایت گھروں میں آگ لگائی گئی۔ اس سے قبل اتوار اور پیر کی درمیانی رات کے دوران ضلع پلوامہ کے سیر جاگیر ترال میں قائم پنچایت گھر میں آگ لگائی گئی تھی۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ آگ لگانے کے ان واقعات کے سلسلے میں کیس درج کرکے ملوثین کا پتہ لگانے کا کام شروع کیا گیا ہے ۔ رپورٹوں کے مطابق ضلع شوپیان کے نازنین پورہ میں قائم پنچایت گھر میں گذشتہ رات قریب ساڑھے نو بجے آگ لگائی گئی۔ آگ کے اس واقعہ میں مذکورہ پنچایت گھر کی کھڑکیوں، دروازوں اور چھت کو نقصان پہنچا ہے ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی اور ریاستی پولیس کے اہلکاروں نے پنچایت گھر میں لگی آگ پر فوری طور پر قابو پالیا۔ پنچایت گھروں میں آگ لگانے کے ایسے ہی واقعات پلوامہ کے دربگام اور ترال کے ناگہ بل میں بھی پیش آئے ہیں۔ تاہم ان دونوں پنچایت گھروں کو معمولی نوعیت کا نقصان ہوا ہے ۔ ان تین واقعات سے قبل اتوار اور پیر کی درمیانی رات کے دوران نامعلوم افراد کی جانب سے پلوامہ کے سیر جاگیر ترال میں قائم پنچایت گھر میں آگ لگائی گئی۔ آگ کی اس واردات میں پنچایت گھر کی کھڑکیوں اور دروازوں کو نقصان پہنچا تھا۔ بتادیں کہ چیف الیکٹورل افسر (سی ای او) جموں و کشمیر شالین کابرا نے اتوار کے روز ریاست میں پنچایتی اداروں کے انتخابات کے شیڈول کا اعلان کیا ۔انہوں نے کہا کہ یہ انتخابات17 نومبرسے 11 دسمبر تک9 مرحلوں میں منعقد کئے جائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT