Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / کشمیر احتجاج میں ایک اور زخمی کی موت، مرنے والوں کی تعداد 58

کشمیر احتجاج میں ایک اور زخمی کی موت، مرنے والوں کی تعداد 58

سری نگر، 13 اگست (سیاست ڈاٹ کام) احتجاج کے دوران سلامتی دستوں کی گولی کا شکار ایک اور زخمی آج صبح اسپتال میں چل بسا۔ اس طرح 9 جولائی سے اب تک سلامتی دستوں کے ہاتھوں مارے جانے والوں کی تعداد بڑھ کر 58 ہوچکی ہے ۔ اننت ناگ میں ہوئے ایک انکاؤنٹر میں حزب المجاہدین کا ایک کمانڈر ہربان وانی اور دیگر دو جنگجو مارے گئے تھے جس کے بعد سے وادی میں لوگ بڑے پیمانے پر احتجاج کررہے ہیں اور سلامتی دستوں کی گولیوں سے 5 ہزار افراد زخمی ہوچکے ہیں اور سیکڑوں کی آنکھیں پھوٹ چکی ہیں۔ایک نوجوان سہیل وانی اس وقت بری طرح زخمی ہوگیا تھا جب 2 اگست کو پلوامہ ضلع میں مظاہرین نے سری نگر۔ جموں شاہراہ پر راستہ روک دیا تھا اور ایس ڈی ایم کے محٖافظوں نے مظاہرین پر گولی چلادی تھی۔ اس نے آج شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ میں دم توڑ دیا۔گارڈ کی فائرنگ میں ایک شخص ہلاک اور سہیل سمیت دو افراد زخمی ہوئے تھے ۔ گارڈ کو بعد میں گرفتار کرلیا گیا تھا۔سہیل کی موت کے ساتھ گولی لگنے سے مرنے والوں کی تعداد 58 ہوچکی ہے ، جن میں دو خواتین بھی شامل ہیں۔ ان کے علاوہ 5 ہزار سے زیادہ افراد زخمی ہیں۔ سیکڑوں نوجوان جن میں کم عمر لڑکے شامل ہیں پیلیٹ گنوں کی وجہ سے بینائی کھوچکے ہیں۔ایک پولیس کانسٹبل ڈرائیورکی ڈوبنے سے موت ہوگئی ہے ۔ اسے اور اس کی گاڑی کو دریائے جہلم میں دھکیل دیا گیا تھا۔ ایک کانسٹبل کلگام ضلع میں گرینیڈ دھماکہ میں مارا گیا۔ 9 جولائی سے اب تک وادی میں پتھراؤ سے تین ہزار سے زیادہ سکیورٹی جوان بھی زخمی ہوئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT