کشمیر: افواج کی اضافی کمپنیوں کو لوک سبھا انتخابات کی تکمیل تک یہیں تعینات رکھنے کا امکان

سری نگر۔ 5 دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) جموں وکشمیر میں گورنر انتظامیہ بلدیاتی و پنچایتی انتخابات کے پُرامن انعقاد کے لئے تعینات کی گئی مرکزی مسلح پولیس فورس (سی اے پی ایف) کی 330 اضافی کمپنیوں کو آئندہ سال اپریل یا مئی میں ہونے والے عام انتخابات کی تکمیل تک یہیں تعینات رکھنے پر غور کررہی ہے ۔ سیکورٹی لحاظ سے حساس مانی جانے والی ریاست جموں وکشمیر میں لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات بیک وقت کرانے کا قوی امکان ہے ۔ سیکورٹی معاملات پر گہری نظر رکھنے والے مبصرین کا کہنا ہے کہ اگر لوک سبھا انتخابات مقررہ وقت اور شیڈول کے مطابق منعقد ہوئے تو مرکزی مسلح پولیس فورس کی 330 اضافی کمپنیوں کو واپس بھیجنا اور پھر جلدی انہیں واپس بلانا نہ صرف ایک مدقوق مشق ہوگی بلکہ یہ بے تحاشا خرچے کا بھی باعث بن جائے گا۔ جموں وکشمیر کے چیف سکریٹری بی وی آر سبھرامنیم نے 25 ستمبر کو سری نگر میں ایک پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ ریاست میں بلدیاتی اور پنچایتی انتخابات کے پرامن اور محفوظ انعقاد کو یقینی بنانے کے لئے سیکورٹی فورسز کی 400 اضافی کمپنیاں تعینات کی جائیں گی۔

TOPPOPULARRECENT