کشمیر اور یو پی میں خواتین پر مظالم کو روکنے مرکز مداخلت کرے: کویتا

ملک میں کانگریس اور بی جے پی کے متبادل کی تیاری کیلئے مساعی حوصلہ افزاء

حیدرآباد۔/14 اپریل، ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس رکن پارلیمنٹ کویتا نے ملک میں خواتین پر بڑھتے مظالم کے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ اترپردیش اور کشمیر میں لڑکیوں کی عصمت ریزی کے واقعات کے ملزمین کو برسراقتدار پارٹی کی جانب سے بچانے کی کوششیں افسوسناک ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں دلتوں اور خواتین پر مظالم میں اضافہ ہوا ہے۔ آئی پی سی دفعات کے تحت درج کئے جانے والے مقدمات میں 40 فیصد کی یکسوئی ہوتی ہے لیکن دلتوں سے متعلق مقدمات کی شرح صرف 28فیصد ہے جن میں خاطیوں کے خلاف کارروائی کی جاتی ہے۔ انہوں نے ایس سی، ایس ٹی ایکٹ میں تبدیلی کی مخالفت کی اور کہا کہ سپریم کورٹ میں مرکز کی جانب سے موثر بحث نہ کئے جانے کے سبب ایکٹ میں تبدیلی کا فیصلہ آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ایکٹ میں کسی بھی تبدیلی کی مخالفت کی ہے۔ ٹی آر ایس پارٹی ایکٹ کی جوں کی توں برقراری کیلئے جدوجہد کرے گی۔ کویتا نے کہا کہ اتر پردیش اور کشمیر میں خواتین کے ساتھ وحشیانہ سلوک کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات تو یہ ہے کہ برسراقتدار پارٹی کی جانب سے خاطیوں کو بچانے کی کوشش کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت میں شامل افراد کو چاہیئے تھا کہ وہ خاطیوں کو سزا دلانے کی کوشش کرتے برخلاف اس کے انہیں بچانے کی کوشش کی گئی۔ کویتا نے کہا کہ خواتین پر مظالم ایک حساس مسئلہ ہے اور مرکز کو خاطیوں کے خلاف کارروائی کو یقینی بنانا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ میں حکومت کے اقدامات کے سبب خواتین پر مظالم میں کمی آئی ہے۔ حکومت نے شی ٹیموں کی تشکیل کے ذریعہ خواتین کو ہراسانی اور مظالم کے واقعات پر قابو پایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں خواتین کو تحفظ کی فراہمی اور متاثرین کو انصاف رسانی مرکز کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کرناٹک میں ایچ ڈی دیوے گوڑا سے کے سی آر کی ملاقات کو خوش آئند قرار دیا اور کہا کہ ملک کی سیاست میں تبدیلی کیلئے ہم خیال جماعتوں کو متحد کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور بی جے پی کے متبادل کی تیاری کے ذریعہ ہی ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور بی جے پی کے بغیر ترقی کے ذریعہ تلنگانہ نے مثال قائم کی ہے۔ چندر شیکھر راؤ ملک گیر سطح پر اسی طرح کی تبدیلی کی کوشش کررہے ہیں اور مختلف جماعتوں سے مشاورت جاری ہے۔ کویتا نے کامن ویلتھ گیمس میں نظام آباد سے تعلق رکھنے والے کھلاڑی حسام الدین کے شاندار مظاہرہ پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ حکومت کی جانب سے انہیں تہنیت پیش کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT