Wednesday , December 19 2018

کشمیر میں اسلامی تعلیمات پر بیداری کیلئے کنونشن کا انعقاد

مغربی تہذیب کی یلغار پر تشویش، خواتین کا بے پردہ ہونا جنسی استحصال کا سبب

مغربی تہذیب کی یلغار پر تشویش، خواتین کا بے پردہ ہونا جنسی استحصال کا سبب
پونچھ۔/5جون، ( سیاست ڈاٹ کام ) کشمیر کے ضلع پونچھ میں مسلمانوں کا دو روزہ ایک کنونشن منعقد ہوا جسے روایتی اقدار اور اسلامی تعلیمات کی اہمیت کو اُجاگر کرنے کی غرض سے بیداری پروگرام بھی کہا جارہا ہے۔ کنونشن میں اسلامی تعلیمات کی اہمیت پر زور دیا گیا جو مغرب کے بڑھتے ہوئے غلبہ کی وجہ سے مفقود ہوتی جارہی ہیں۔ عاالم اسلام سے تعلق رکھنے والے علمائے دین نے نہ صرف کشمیر بلکہ دیگر ریاستوں سے بھی شرکت کی اور شرکاء کو اسلامی تعلیمات کی اہمیت سے واقف کروایا۔ علمائے دین نے کہا کہ مغرب کے بڑھتے ہوئے غلبہ نے نہ صرف اسلام کو متاثر کیا بلکہ دیگر مذاہب بھی اس کی زد میں آرہے ہیں۔ خصوصی طور پر نوجوان طبقہ آج اسلامی تعلیمات سے دور ہوچکا ہے۔ عالم دین مولانا فاروق احمد نے کہا کہ مغربی کلچر نے عوام پر منفی اثرات مرتب کئے ہیں لہذا یہ کہنے میں کوئی عار نہیں کہ آج مسلمان سچا مسلمان نہیں رہا ، ہندو سچا ہندو نہیں رہا،سکھ سچا سکھ نہیں رہا۔ سب پر مغربی تہذیب نے ہلہ بول کر انھیں خود ان کی مذہبی تعلیمات سے دور کردیاہے۔ کنونشن میں خواتین کے لئے پردہ کی اہمیت پر بھی زور دیا گیا ۔ جس کا چلن آہستہ آہستہ ختم ہوتا جارہا ہے اور یہی وجہ ہے کہ خواتین بے پردہ ہونے سے ہم اُنکے جنسی استحصال کی خبریں سنتے اور پڑھتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT