Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / کشمیر میں جھڑپیں جاری ، 3 افراد زخمی ،وادی میں کشیدگی

کشمیر میں جھڑپیں جاری ، 3 افراد زخمی ،وادی میں کشیدگی

سرینگر ۔ /14 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سنگباری کرنے والے ہجوموں اور فوج کے درمیان منتشر جھڑپوں کی اطلاعات وادی کشمیر کے مختلف مقامات سے موصول ہوئی ۔ حالانکہ کرفیو جیسی تحدیدات آج دوسرے دن بھی جاری رہیں ۔ موبائیل اور انٹرنیٹ خدمات بعض علاقوں میں کشیدگی کے پیش نظر معطل کردی گئی ہیں ۔ ایک ملزم پولیس اور دو شہری پرتشدد واقعات اور جھڑپوں میں وادی کے مختلف علاقوں میں زخمی ہوگئے ۔ آج جھڑپوں کے تازہ واقعات پیش آئے ۔ ایک کانسٹبل بلال احمد چہرہ پر پتھر لگنے کی وجہ سے قصبہ ہندواڑہ کے علاقہ ماگم میں احتجاجیوں کے پھینکے ہوئے پتھر سے چہرہ پر زخم آنے سے دواخانہ روانہ کردیا گیا ۔ ایک شہری کی ٹانگ پر آنسو گیاس کا شیل ٹکراکر وہ زخمی ہوگیا ۔اسے بھی مقامی ہاسپٹل میں شریک کردیا گیا جہاں اُس کی حالت مستحکم بتائی جاتی ہے ۔ ایک ٹیکسی ڈرائیور کلگام میں سنگباری سے زخمی ہوا ۔ سنگباری کی اطلاعات شہر سرینگر کے مختلف علاقوں سے وصول ہوئیں لیکن کسی ہلاکت کی اطلاع نہیں ملی ۔ 4 شہری بشمول ایک خاتون منگل کے دن اور کل احتجاجیوں اور فوج کے درمیان قصبہ ہندواڑہ میں جھڑپوں کے دوران ہلاک ہوگئے تھے ۔ 6 پولیس اسٹیشنوں کے حدود میں شہر سرینگر میں تحدیدات جاری ہیں ۔ موبائیل انٹرنیٹ خدمات شمالی کشمیر کے علاقوں میں معطل کردی گیئں تاکہ افواہیں پھیلانے والوں کی سرکوبی کی جاسکے ۔ علحدنگی پسند گروپس نے کل سے بند کی اپیل کی تھی جس کی وجہ سے بازار بند رہے اور عوامی ٹرانسپورٹ سڑکوں پر نظر نہیں آئی۔ چیف منسٹر جموں و کشمیر نے ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں جموں و کشمیر کی نظم و ضبط کی صورتحال کا جائزہ لیا وہ اپنے تین روزہ دورہ دہلی کے بعد آج ہی سرینگر پہونچی تھیں ۔ دہلی میں انہوں نے صدرجمہوریہ ، وزیراعظم اور قومی صدر بی جے پی سے کشمیر کی صورتحال کے بارے میں تبادلہ خیال کیا تھا اور واپسی کے فوری بعد اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کیا ۔

TOPPOPULARRECENT