Monday , August 20 2018
Home / ہندوستان / کشمیر میں خانقاہ معلی میں آتشزدگی، عوام میں صدمے کی لہر

کشمیر میں خانقاہ معلی میں آتشزدگی، عوام میں صدمے کی لہر

سری نگر، 15نومبر (سیاست ڈاٹ کام) جموں وکشمیر کے گرمائی دارالحکومت سری نگر کے پائین شہر میں آتشزدگی کی ایک دلدوز واردات میں بلند پایہ ولی کامل حضرت امیر کبیر میر سید علی ہمدانیؒ سے منسوب قریب 600 سال پرانی زیارت گاہ ‘تاریخی خانقاہ معلی’ کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔ خانقاہ کو ہوئے نقصان سے کشمیری عوام میں صدمے کی لہر پھیلی ہوئی ہے۔ چیف منسٹر محبوبہ مفتی نے اس خانقاہ کا دورہ کرتے ہوئے آتشزدگی سے ہونے والے نقصان کا جائزہ لیا۔ منگل اور بدھ کی درمیانی شب کو بھڑک اٹھنے والی اس بھیانک آگ کے باعث خانقاہ کے گنبد اور اوپری منزل کو شدید نقصان پہنچا ہے ۔ تاہم خانقاہ میں موجود سبھی تبرکات محفوظ ہیں۔ آتشزدگی کی بظاہر وجہ شارٹ سرکٹ بتائی جارہی ہے ۔ تاہم مقامی لوگوں کی مانیں تو خانقاہ میں آگ آسمانی بجلی سے لگی ہے ۔ پائین شہر میں دریائے جہلم کے کنارے اور فتح کدل و زینہ کدل (پلوں) کے درمیان واقع اس صدیوں پرانی خانقاہ کے ایک منتظم نے یو این آئی کو بتایا کہ ‘خانقاہ میں موجود سبھی تبرکات محفوظ ہیں۔ آگ کی اس دلدوز واردات میں گنبد اور اوپری منزل کو نقصان پہنچا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ خانقاہ معلی مکمل طور پر لکڑی سے بنی ہوئی ہے ۔ خانقاہ معلی اور اس سے ملحقہ علاقوں کے لوگوں نے جہاں محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی کی فوری کاروائی کی سراہنا کی، وہیں یہ بھی بتایا کہ ہیلی کاپٹروں کے استعمال سے خانقاہ کو بڑے پیمانے کے نقصان سے بچایا جاسکتا تھا۔ یو این آئی کے ایک نامہ نگار نے جو آگ پر مکمل طور پر قابو پائے جانے تک وہاں (موقع ) پر موجود رہے، بتایا کہ خانقاہ میں آگ لگنے کی خبر پھیلنے کے ساتھ ہی ہزاروں کی تعداد میں لوگ وہاں پہنچ گئے ۔ انہوں نے بتایا کہ جہاں لوگوں کو محکمہ فائر سروس کے اہلکاروں کی مدد میں مصروف دیکھا گیا، وہیں وہاں موجود خواتین کو دعاؤں میں مشغول دیکھا گیا۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق سری نگر میونسپل کارپوریشن اور مقامی لوگوں نے بدھ کی علی الصبح خانقاہ میں صفائی مہم شروع کی جو گھنٹوں تک جاری رہی۔ ان اطلاعات کے مطابق نقصانات کا جائزہ لینے کے لئے انتظامیہ کے عہدیداروں اور سیاستدانوں کا خانقاہ معلی میں چہارشنبہ کی صبح سے ہی تانتا بندھا رہا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT