Saturday , September 22 2018
Home / ہندوستان / کشمیر میں سنگباری پر قومی انسانی حقوق کمیشن کا تاثر

کشمیر میں سنگباری پر قومی انسانی حقوق کمیشن کا تاثر

فوجی عہدیداروں کے بچوں کی کمیشن سے شکایت، فوجیوں پر انسانی حقوق کی خلاف ورزی کا الزام
نئی دہلی۔9 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) قومی انسانی حقوق کمیشن نے فوجی عہدیداروں کے تین بچوں کی شکایت کو نوٹ کرلیا ہے جس میں الزام عائد کیا گیا تھا کہ انسانی حقوق کی فوجیوں کی جانب سے خلاف ورزی کی جارہی ہے۔ جوں و کشمیر میں سنگباری کے واقعات کے حوالے سے یہ شکایت کی گئی ہے۔ اپنے ایک بیان میں آْج قومی انسانی حقوق کمیشن نے کہا کہ شکایت میں سنگباری کے حالیہ واقعات کی درست تحقیقات اور مداخلت کی درخواست بھی کی گئی ہے۔ فوجیوں نے 27 جنوری کو جموں و کشمیر کے ضلع شوپیان میں ایک بے قابو ہجوم کو زدوکوب کیا تھا۔ اپنی شکایت میں فوجی عہدیداروں کے تینوں بچوں نے کہا کہ انہیں سنگباری کے اور بے قابو ہجوم کی زدوکوب کے واقعات سے صدمہ پہنچا ہے۔ بیان کے بموجب کمیشن نے کہا کہ بیان میں جو واقعات بیان کیے گئے ہیں اور جو الزامات عائد کیے گئے ہیں اس کی مناسب تحقیق اور حقائق پر مبنی رپورٹ وزارت دفاع سے سکریٹری کے ذریعہ طلب کی جائے گی تاکہ موجودہ صورتحال اور مرکزی حکومت کے اقدامات کے بارے میں معلومات حاصل ہوسکیں۔ شکایت میں جو نکات اٹھائے گئے ہیں اور انسانی حقوق کی فوجیوں کی جانب سے ریاست جموں و کشمیر میں خلاف ورزی اور ان کی تحقیق کے بارے میں جو شکایت کی گئی ہے اس کی مناسب تحقیق کرتے ہوئے حقائق پر مبنی رپورٹ پیش کرنے کی وزارت دفاع کو ہدایت دی گئی ہے۔ اس سلسلہ میں معتمد دفاع کو اندرون چار ہفتے رپورٹ پیش کرنے کی احکامات دیے گئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT