Monday , June 18 2018
Home / ہندوستان / کشمیر میں سکھوں کی اقتصادی حالت کمزور

کشمیر میں سکھوں کی اقتصادی حالت کمزور

۔15برس سے اقلیتی موقف کا مطالبہ :سکھ کوآرڈی نیشن کمیٹی
جموں14دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) آل پارٹیز سکھ کوآرڈی نیشن نیشن کمیٹی کے چیئرمین جگ موہن سنگھ رینہ نے کہا کہ جموں وکشمیر میں مقیم سکھوں کا معیار زندگی بلند کرنے کے لئے انہیں اقلیت کا درجہ دینا انتہائی ضروری ہے ۔انہوں نے الزام لگایا کہ گذشتہ پندرہ برسوں کے دوران معرض وجود میں آنے والی مرکزی اور ریاستی حکومتوں نے سکھوں کو دھوکہ دیا ہے ۔ مسٹر رینہ نے جمعرات کو یہاں متعدد سکھ تنظیموں کے سربراہان کی موجودگی میں نامہ نگاروں کو بتایا کہ پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) نے سکھوں کو اقلیت کا درجہ دینے کا وعدہ اپنے گذشتہ انتخابی منشور میں شامل کیا، لیکن چار برس گذر جانے کے باوجود وعدے کو پورا کرنے کی سمت میں کوئی اقدام نہیں اٹھایا گیا۔انہوں نے بتایا کہ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کے والد مفتی محمد سعید نے سکھوں سے وعدہ کیا تھا کہ ریاست میں نیشنل مینارٹی ایکٹ لاگو کرکے سکھوں کو اقلیت کا درجہ دیا جائے گا، لیکن اس کے برعکس محترمہ مفتی نے سپریم کورٹ میں ایک حلف نامہ دائر کیا جو کہ تمام اقلیتوں کے خلاف ہے ۔

TOPPOPULARRECENT