Tuesday , December 19 2017
Home / ہندوستان / کشمیر میں لاریوں کی ہڑتال

کشمیر میں لاریوں کی ہڑتال

سرینگر /ادھم پور ۔ 12اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) وادی کشمیر میں معمولات زندگی آج مفلوج ہوگئے کیونکہ تاجروں کی تنظیموں نے ہڑتال کا اعلان کیا تھا جس کی تائید علحدگی پسند گروپ کررہے تھے ۔ یہ ہڑتال ادھم پور میں ایک لاری پر گذشتہ ہفتہ حملہ کے خلاف بطور احتجاج کی گئی تھی ۔ جب کہ فوج نے قومی شاہراہ پر گاڑیوں کی نقل و حرکت پر گہری نظررکھی تھی ۔ اسکولس ‘ دکانیں اور دیگر تجارتی ادارے وادی کشمیر میں ہڑتال کے پیش نظر بند تھے ۔ کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینوفیکچرر اسوسی ایشن اور کشمیر اکنامک الائنس نے ہڑتال کا اعلان کیا تھا ۔ علحدگی پسند گروپس حُریت کانفرنس ( دونوں گروپس ) اور جے کے ایل ایف نے ہڑتال کی تائید کی تھی ۔ سرکاری ٹرانسپورٹ سڑکوں پر نظر نہیں آیا ‘ خانگی گاڑیاں بشمول ٹیکسیاں سڑک پر حسب معمول چل رہی تھیں ۔ سرکاری دفاتر میں حاضری بہت کم تھی کیونکہ سرکاری ٹرانسپورٹ دستیاب نہیں تھا ۔ یہ ہڑتال ادھم پور میں ایک لاری پر پٹرول بم حملہ کے خلاف بطور احتجاج کی گئی تھی ۔ اس حملہ میں دو کشمیری زخمی ہوئے جنہیں دہلی کے اسپتال منتقل کردیا گیاہے کیونکہ وہ شدید جھلس گئے تھے ۔ اس سلسلہ میں 6افراد کو گرفتار کرلیاگیا ہے ۔ادھم پور کے سرکاری عہدیداروں نے کہا کہ وسیع تر حفاظتی انتظامات قومی شاہراہ پر کئے گئے ہیں ۔ انہوں نے ان افواہوں کو مسترد کردیا کہ کشمیر جانے والی گاڑیوں پر تازہ حملوں کا اندیشہ ہے ۔ ملازمین پولیس کی ٹیمیں سادہ لباس میں گہری نگرانی کررہے ہیں ۔ پُرامن ماحول کو زہریلا کرنے کی کسی بھی کوشش پر نظر رکھی جارہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT