Tuesday , November 21 2017
Home / ہندوستان / کشمیر میں پاکستانی اور دیگر ٹی وی چیانلس پر پابندی

کشمیر میں پاکستانی اور دیگر ٹی وی چیانلس پر پابندی

سری نگر ، 6مئی (سیاست ڈاٹ کام) جموں وکشمیر حکومت کی جانب سے وادی کشمیر میں 22 سوشل میڈیا ویب سائٹس پر پابندی عائد کئے جانے کے بعد مرکزی حکومت نے ریاستی حکومت سے وادی میں تین مسلم ممالک بشمول پاکستان، سعودی عرب اور ایران کے ٹیلی ویژن چیانلس کی نشریات کو روکنے کی ہدایت دی ہے۔ حیران کن بات یہ ہے کہ جن ٹی وی چیانلس نشریات بند کرنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں، اُن میں سے بیشتر مذہبی ٹی وی چینل جیسے پیس ٹی وی، سعودی سنت، سعودی قرآن، العربیہ، پیغام، ہدایت، نور، مدنی، سحر، کربلا، ہادی اور اہلبیت شامل ہیں۔ مرکزی حکومت کی جانب سے پاکستانی، سعودی اور ایرانی ٹی وی چیانلس  کی نشریات بند کرنے کے ریاستی حکومت کے نام ہدایات ایک کثیرالاشاعت انگریزی روزنامہ کی اس رپورٹ کے بعد جاری کی گئی جس میں کہا گیا تھا کہ وادی میں کیبل آپریٹروں کی جانب سے معروف مذہبی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک کے پیس ٹی وی (جس پر امتناع ہے) سمیت پاکستان اور سعودی عرب کے پچاس ٹی وی چیانلس غیرقانونی طور پر دکھائے جارہے ہیں۔ رپورٹوں کے مطابق اطلاعات و نشریات کے مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو نے ریاستی چیف سکریٹری بی بی ویاس کو ہدایت دی کہ وہ وادی میں پاکستانی ٹی وی چیانلس کی نشریات روکنے ضروری اقدامات کریں۔ انہوں نے نئی دہلی میں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وادی میں امتناع کے باوجود ٹی وی چینل دکھانے والے کیبل آپریٹرس کے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT