Tuesday , December 11 2018

کشمیر میں پولیس فائرنگ میں نوجوان ہلاک

افضل گرو کو پھانسی کی دوسری برسی پر احتجاجی مظاہرے ، حریت قائدین نظربند

افضل گرو کو پھانسی کی دوسری برسی پر احتجاجی مظاہرے ، حریت قائدین نظربند
سرینگر ۔ 9 فبروری ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) افضل گرو کو پھانسی کی دوسری برسی کے موقع پر آج وادی میں احتجاجی مظاہرے کئے گئے ۔ بارہمولہ میں احتجاج کے دوران پولیس فائرنگ کے نتیجہ میں ایک شخص ہلاک اور ایک دیگر زخمی ہوگیا ۔ پولیس نے مبینہ طورپر جھڑپ کے دوران احتجاجیوں پر فائرنگ کردی ۔ اس ضمن میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے اور جس پولیس اہلکار نے گولی چلائی اُس سے پوچھ تاچھ کی جارہی ہے ۔ پولیس نے اس واقعہ کو انتہائی افسوسناک قرار دیا ۔ سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ نے فائرنگ میں 19 سالہ نوجوان کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ تحقیقات کے ذریعہ حقائق کو منظرعام پر لایا جانا چاہئے ۔ انھوں نے کہا کہ اُن حالات کی تحقیقات ضروری ہے جن کے نتیجہ میں یہ سانحہ پیش آیا۔ سچائی کا بلاتاخیر انکشاف ہونا چاہئے ۔ سابقہ چیف منسٹر نے فاروق احمد بھٹ کے ارکان خاندان سے اظہارتعزیت کیا اور واقعہ میں زخمی ہوجانے والوں کی عاجلانہ صحتیابی کیلئے دعا کی ۔ بھٹ اُس وقت ہلاک ہوگیا تھا جب کہ فوج نے احتجاجی مظاہرین پر جو افضل گروہ کی دوسری برسی پر احتجاج کررہے تھے فائرنگ کی تھی ۔ پارلیمنٹ پر حملہ کیس میں محمد افضل گرو کو دی گئی سزائے موت کی دوسری برسی کے موقع پر سرینگر شہر میں احتجاج کے پیش نظر سینکڑوں علحدگی پسند لیڈروں کو محروس یا گھروں پر نظر بند کردیاگیا اور شہر میں امتناعی احکامات نافذ کردئیے گئے ۔ سرینگر کے پرانا شہر میں صفاکدال ، مہاراج گنج ، کھنیار ، دین واری اور نورہٹا پولیس اسٹیشنوں کے علاقوں اور تجارتی مرکز لال چوک کے میسوما پولیس اسٹیشن کے حدود میں کرفیو جیسی پابندیاں عائد کردی گئی ہیں ۔ ڈپٹی کمشنر پولیس سرینگر فاروق احمد نے بتایا کہ مذکورہ علاقوں میں امن و قانون کی برقراری کے لیے دفعہ 144 نافذ کردیا گیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ صدر نشین JKLF محمد یسین ملک کو میسوما علاقہ میں ان کی قیام گاہ سے کل شام حراست میں لے کر کوٹھی باغ پولیس اسٹیشن محروس کردیا گیا اور طبی معائنوں کے بعد ملک کو سنٹرل جیل منتقل کردیا گیا ۔ دریں اثناء حریت قائدین شبیر احمد شاہ ، محمد اشرف شہری اور ایاز اکبر کو احتجاج سے باز رکھنے کے لیے گھروں پر نظر بند کردیا گیا ۔ پرانا شہر کے عوام نے بتایا کہ پولیس اور نیم فوجی دستہ CRPF کی بھاری تعداد کو متعین کیا گیا ہے اور قطار در قطار خار دار تاروں سے ناکہ بندی کردی گئی ہے ۔ جب کہ وادی کشمیر میں بھی علحدگی پسندوں کی آج اور 11 فروری کو ہڑتال کی اپیل پر عام زندگی متاثر رہی ۔ آج ہی کے دن 9 فروری کو افضل گرو اور 11 فروری کو JKLF بانی محمد مقبول بھٹ کو پھانسی کی سزا دی گئی تھی ۔ شدت پسند حریت کانفرنس اور JKLF نے دو روزہ ہڑتال اور راستہ روکو احتجاج کا اعلان کیا ہے ۔ واضح رہے کہ افضل گرو کو 9 فروری 2013 کے دن تہاڑ جیل دہلی اور مقبول بھٹ کو 11 فرری 1984 کے دن پھانسی پر لٹکادیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT