Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / کشمیر کی صورتحال کیلئے بیرونی ہاتھ ذمہ دار : محبوبہ مفتی

کشمیر کی صورتحال کیلئے بیرونی ہاتھ ذمہ دار : محبوبہ مفتی

نئی دہلی ۔ /15 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) جموں و کشمیر کی چیف منسٹر محبوبہ مفتی نے چین پر کشمیر کے داخلی معاملات میں مداخلت کرنے کا الزام عائد کی ہیں ۔ محبوبہ مفتی جو مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کو اپنی ریاست میں امن و قانون کی تازہ ترین صورتحال سے باخبر کرنے کے لئے دہلی پہونچی تھیں ، اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ امن و قانون کی بگڑتی ہوئی صورتحال کے لئے بیرونی طاقتیں ذمہ دار ہیں ۔ محبوبہ مفتی نے کہا کہ ’’بیرونی ہاتھ کار فرما ہے اور بدقسمتی سے چین بھی دخل اندازی کررہا ہے ‘‘ ۔ انہوں نے یہ سخت ریمارک ایک ایسے وقت کیا ہے جب سکم کے ڈوکلام سیکٹر میں سڑک کی تعمیر کے تنازعہ پر ہند اور چین کے درمیان تعطل جاری ہے اور دونوں ملکوں کی فوجیں ایک دوسرے کے مد مقابل ہوتی رہی ہیں ۔ محبوب مفتی نے کہا کہ فرقہ وارانہ فساد بھڑکانے کے مقصد سے امرناتھ یاتریوں پر حملہ کیا گیا تھا لیکن کشمیری عوام نے اس سازش کو ناکام بنادیا ہے ۔ محبوبہ مفتی نے اپنی ریاست میں امن و قانون کی صورتحال اور امرناتھ یاتریوں کو فراہم کی جانے والی سکیورٹی پر تبادلہ خیال کیلئے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے آج ملاقات کی ہے ۔ عہدیداروں نے کہا کہ نصف گھنٹے تک جاری رہی اس بات چیت کے دوران چیف منسٹر نے وزیر داخلہ کو وادی کشمیر میں امن و قانون برقرار رکھنے کے لئے کئے جانے والے اقدامات سے واقف کروایا ۔ امرناتھ یاتریوں کیلئے سکیورٹی کو یقینی بنانے کے لئے اٹھائے جانے والے قدم پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ امرناتھ غار میں واقع مندر سے واپسی کے دوران سات یاتریوں کو عسکریت پسندوں نے اننت ناگ میں ہلاک کردیا تھا ۔
جموں و کشمیر میں انسداد عسکریت پسندوں میں مصروف سکیورٹی ایجنسیوں سے کہا گیا ہے کہ وہ سکیورٹی منصوبوں کو پوری شدت و قوت کے ساتھ روبعمل لائیں ۔ ہمالیہ کی بلند چوٹیوں پر واقع مندر میں تاحال 1.86 یاتری درشن کرچکے ہیں ۔ ریاستی پولیس کے علاوہ 21,000 نیم فوجی فورسس اور فوج کے دو بٹالینس یاترا کے راستوں پر سکیورٹی کے لئے تعینات کئے گئے ہیں ۔

TOPPOPULARRECENT