Friday , November 24 2017
Home / ہندوستان / کشمیر کے دو اضلاع میں عسکریت پسندوں کی ہلاکت پر ہڑتال

کشمیر کے دو اضلاع میں عسکریت پسندوں کی ہلاکت پر ہڑتال

دیگر 8 اضلاع میں معمول کی زندگی بحال
سری نگر۔ 10دسمبر (سیاست ڈاٹ کام) جنوبی کشمیر کے بج بہاڑہ آرونی میں دو عسکریت پسندوںکی ہلاکت کے خلاف اننت ناگ اور کولگام اضلاع میں ہفتہ کو ہڑتال کے باعث معمول کی زندگی مفلوج رہی۔ بج بہاڑہ کے حسن پورہ میں عسکریت پسندوں اور سیکورٹی فورسز کے مابین کم ازکم 40 گھنٹوں تک جاری رہنے والی جھڑپ جمعہ کی صبح دو عسکریت پسندوں کی ہلاکت پر ختم ہوگئی ۔ جھڑپ کے مقام ‘حسن پورہ آرونی’ میں جمعرات کو سیکورٹی فورسز کی کاروائی میں عارف احمد شاہ نامی ایک عام شہری ہلاک ہوگیا۔ریاستی پولیس کا کہنا ہے کہ عارف احمد سیکورٹی فورسز کی مظاہرین پر فائرنگ سے نہیں بلکہ ایک سٹرے بلٹ لگنے سے جاں بحق ہوا ہے ۔ اگرچہ کشمیری عوام کے لئے حق خود ارادیت کا مطالبہ کررہی علیحدگی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے وادی میں جاری ہڑتال میں ہفتہ سے تین روزہ ڈھیل کا اعلان کر رکھا ہے ، تاہم باوجود اس کے اننت ناگ اور کولگام اضلاع میں دکانیں اور تجارتی مراکز بند رہے جبکہ سڑکوں پر گاڑیوں کی آمدورفت معطل رہی۔ اس کے علاوہ تعلیمی ادارے بھی بند رہے ۔ تاہم سری نگر جموں قومی شاہراہ پر گاڑیوں کی آمدورفت معمول کے مطابق جاری رہی۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دونوں اضلاع میں امن وامان کی صورتحال کو بنائے رکھنے کے لئے سیکورٹی فورسز کی اضافی نفری تعینات رکھی گئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT