Tuesday , December 19 2017
Home / دنیا / کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ’پاکستان، ٹیررستان‘ میں تبدیل

کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ’پاکستان، ٹیررستان‘ میں تبدیل

وزیراعظم پاکستان کی جانب سے مسئلہ کشمیر کو موضوع بنانے پر سخت احتجاج، اقوام متحدہ میں ہندوستانی مندوب کا خطاب

اقوام متحدہ ۔ 22 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستان نے آج پاکستان کی سخت مذمت کرتے ہوئے اس کو ’’خالص دہشت گردوں کی سرزمین اور ٹیررستان (دہشت گردی کا وطن) قرار دیا جو عالمی دہشت گردی پیدا و ار کرنے والی صنعت کی میزبانی و مہمان نوازی کررہا ہے۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں ہندوستان کی خاتون مندوب اینام گمبھیر نے انتہائی تلخ و تند الفاظ میں خطاب کے دوران کہا کہ ’’یہ امر بھی غیرمعمولی ہیکہ اسامہ بن لادن کو تحفظ اور ملا عمر کو پناہ دینے والے ملک کو دہشت گردی کے شکار ملک کی حیثیت سے ڈھونگ اور کھلواڑ کیلئے سوجھ بوجھ سے کام لینا چاہئے۔ پاکستان کے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی جانب سے جنرل اسمبلی میں مسئلہ کشمیر کو اٹھائے جانے کے بعد ہندوستان اپنا جواب دینے کا حق استعمال کررہا تھا۔ اقوام متحدہ کے متصل مشن میں ہندوستان کی نرمٹ سکریٹری اینام گمبھیر نے زور دیکر ادعا کیا کہ متبادل حقائق پیدا کرنے سے اصل حقیقت نہیں بدلتی اور کہا کہ ’’پاکستان کے تمام پڑوسی اب کافی تکلیف کے ساتھ ان حربوں کو سمجھنے کے عادی ہوگئے ہیں جو دراصل جھوٹ، دھوکہ اور حقائق کو مسخ کرتے ہوئے بنائے جاتے ہیں‘‘۔

انہوں نے کہا کہ ’’پاکستان اپنی مختصر تاریخ میں دہشت سے مربوط و منسوب ہوچکی ہے‘‘۔ اینام گمبھیر نے پاکستان کے نام کا مذاق اڑاتے ہوئے کہا کہ ایک ملک جس کا نام ’’پاکی کی سرزمین‘‘ ہے اور پاکی کی سرزمین کی امنگ و جستجو نے درحقیقت ’’خالص ؍ پاک دہشت گردی‘‘ کی سرزمین فراہم کی ہے۔ چنانچہ پاکستان اب ’’ٹیررستان‘‘ (دہشت گردی کی سرزمین) بن گیا ہے جہاں ایک تیزی کے ساتھ پروان چڑھنے والی صنعت عالمی دہشت گردی تیار اور برآمد کررہی ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی موجودہ حالت کا اس حقیقت سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ اقوام متحدہ کی طرف سے دہشت گرد قرار دی جانے والی تنظیم لشکرطیبہ کے ایک لیڈر حافظ محمد سعید کو اب ایک سیاسی جماعت کے رہنما کی حیثیت سے قانونی موقف دینے کی کوشش کی جارہی ہے۔ اینام گمبھیر نے کہا کہ ’’جموں و کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے اور ہمیشہ رہے گا۔ تاہم وہ (پاکستان) سرحد پار دہشت گردی میں خواہ کتنا ہی اضافہ کیوں نہ کرے وہ ہندوستان کی علاقائی سالمیت کو متاثر کرنے میں دستیاب نہیں ہوگا‘‘۔ قبل ازیں پاکستان کے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ہندوستان پر اپنے ملک کے خلاف دہشت گرد سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا الزام عائد کیا تھا اور خبردار کیا تھا کہ وہ (اگر) پاکستان کے خلاف محدود جنگ کے لائن آف کنٹرول کے اس پار کی معرکہ آرائی میں ملوث ہونے پر مساویانہ انداز میں جواب دیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT