Thursday , November 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کلبرگی کو اسمارٹ سٹیز کی فہرست میں شامل کرنے کا ایک اور موقع

کلبرگی کو اسمارٹ سٹیز کی فہرست میں شامل کرنے کا ایک اور موقع

میونسپل کارپوریشن کی جانب سے مرکز کو مطلوبہ نظرثانی شدہ دستاویزات کی دوبارہ روانگی

کلبرگی 11اگست (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ): رکن پارلیمینٹ کلبرگی و قائد کانگریس پارلیمانی پارٹی ڈاکٹر ملیکارجن کھرگے نے دہلی سے مئیر کلبرگی کو فون کرتے ہوئے کہاتھا کہ کلبرگی کو اسمارٹ سٹی بنانے کے ضمن میں مرکزی حکومت کو کارپوریشن کی جانب سے جو ضروری دستاویزات روانہ کی گئی تھیں ان دستاویزات کا پھر ایک بار تفصیلی مطالعہ و جانچ کرکے انھیں دوبارہ مرکزی حکومت کو روانہ کیا جائے ۔ واضح رہے کہ کلبرگہ کو اسمارٹ سٹی  بنانے کے ضمن میں جن امور کی ضرورت تھی اور کلبرگی سے روانہ کردہ دستاویزات میں جن باتوںکی کمی تھی ان کے سبب اس معاملہ میں کلبرگی کے دوسرے شہروںکے مقابلہ میں 100میں سے 84نشانات ملے ۔ اس طرح 16نشانات کیے سبب کلبرگی کو اسمارٹ سٹیز کی فہرست میں شامل نہیں کیا جاسکا ۔ مسٹر کھرگے نے کہا ہے کہ اگر گلبرگہ سے روانہ کردی دستاویزات کا پھر ایک بار صحیح طور پر جائزہ لیکر مکمل رپورٹ روانہ کی جائے تو ممکن ہے کہ کلبرگی شہر کو ان دستاویزات پر نظر ثانی کے بعد اسمارٹ ستیز کی فہرست میں شامل کرلیا جائے ۔ اس طرح کلبرگی کو اسمارٹ سٹیز کی فہرست میں شامل کرنے کا ایک اور موقع ہے ، گنجائش ہے۔ معلوم ہواہے کہ کلبرگی سے جو دستاویزات مرکزی حکومت کو روانہ کی گئی تھیں ان میں غلطی ہوئی تھی ۔ وہ اس طرح کے کہ گلبرگہ سے جو دسویزات ریاستی حکومتکے توسط سے مرکز کو روانہ کی گئی تھیں ان میں غلطی ہوئی تھی۔ کلبرگہ سے بنگلور کے ریاستی عہدہ دارکمشنر سری کانت کٹی منی کو یہ دستاویزات روانہ کی گئی تھیں ۔ یہ عہدہ دار وظیفہ پر علیحہ ہورہا تھا۔ جب یہ دستاویزات جب بنگلور پہنچیں تو یہ عہدہ دار ملازمت سے سبکدوش ہوچکا تھا۔ نیچے کے عہدہ داران نے دستاویزات کا مکمل جائیزہ لئے بغیر یا انکی مکمل جانچ کئے بغیر انھیں دہلی روانہ کردیا جس کے نتیجہ میں کلبرگی کو اسمارٹ سٹیز کی  فہرست میں شامل نہیںکیا جاسکا ۔مسٹر ملیکارجن کھرگے کے مشورہ پر کلبرگی کارپوریشن کی جانب سے مذکورہ بالا دستاویزات کی دوبارہ جانچ کی گئی اور یہ پتہ چلایا گیا کہ غلطیاں کہا ں ہوئیں ہیں ۔ ان غلطیوںکو کی تصحیح کرکے دوبارہ وہ دستاویزات ریاستی حکومت کی وساطت سے مرکز کو روانہ کردی گئی ہیں ۔ اس طرح کہا جارہا ہے کہ گلبرگہ کو اسمارٹ ستیز کی فہرست مینشامل کرنے کا ایک اور موقع مل سکتا ہے ۔ کہا جارہا ہے کہ مرکزی  وزیر مسٹر وینکیا نائیڈو جو مرکزی حکومت میں شہری ترقیات کے وزیر ہیں اور جو ریاست کرناٹک سے راجیہ سبھا کے لئے منتخب ہوئے ہیں ان سے بات چیت کے بعد اور نئی دستاویزات کی پیش کشی کے بعد کلبرگی کو اسمارٹ سٹی بنانے کے لئے مرکز کی جانب سے منتخب کئے گئے شہروںکی فہرست میں شامل کیا جاسکتا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT