Wednesday , December 12 2018

کلیدی دفاعی معاملتوں پر تیز رفتار مذاکرات سے ہند ۔روس اتفاق

نئی دہلی ۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) وزیردفاع نرملا سیتارامن نے ماسکو میں روسی ہم منصب جنرل سرگئی شوائیگو اور وزیرصنعت و تجارت ڈسینس منتوروف سے تفصیلی بات چیت کی۔ اس دوران دونوں فرقیوں نے مختلف فوجی پلیٹ فارمس پر مذاکرات کو مزید وسعت دینے سے اتفاق کرلیا۔ وزارت دفاع کے عہدیداروں نے نئی دہلی میں کہا کہ بات چیت کے دوران جانبین نے باہمی دفاعی تعاون کو مزید مستحکم بنانے سے اتفاق کیا۔ نرملا سیتارامن بین الاقوامی سلامتی پر ساتویں ماسکو کانفرنس میں شرکت کیلئے روس کا تین روزہ دورہ کررہی ہیں۔ روس، ہندوستان کو اسلحہ سربراہ کرنے والا ایک کلیدی ملک ہے۔ تاہم مسلح افواج کی یہ دیرینہ شکایت ہیکہ روس سے پیچیدہ فاضل کل پرزوں اور آلات کی سربراہی کیلئے طویل وقت لگتا ہے جس کے نتیجہ میں اس ملک سے خریدے جانے والے فوجی سازوسامان کی دیکھ بھال متاثر ہوتی ہے۔ ہندوستان روس سے اصرار کررہا ہیکہ بڑی دفاعی معاملتوں میں کل پرزوں کی ٹیکنالوجی میں حصہ داری کیلئے فراخدلانہ اندازفکر اختیار کیا جائے کیونکہ ہندوستانی اسلحہ نظام کا بڑا حصہ روسی ساختہ ہے اور اس کے پرزوں کے حصول میں تاخیر سے روزمرہ کی سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوا کرتی ہیں۔

تحفظات ختم کرنے یا اس کی اجازت دینے سے
بی جے پی کا انکار ، صدر بی جے پی کا بیان
بھوانی پٹنہ (اڈیشہ)۔ 4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے آج کہا کہ مرکزی حکومت درج فہرست طبقات و قبائل کو تعلیم اور ملازمتوں میں تحفظات کی پالیسی کو کبھی منسوخ نہیں کرے گی اور نہ ہی کسی کو ایسا کرنے کی اجازت دے گی۔ انہوں نے یہاں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’بی آر امبیڈکر کی طرف سے دستور میں وضع کردہ تحفظات کی پالیسی کو بدلنے کی کوئی جرأت نہیں بھی نہیں کرسکتا‘‘۔ درج فہرست طبقات و قبائل (انسداد مظالم) قانون کو مبینہ طور پر نرم بتائے جانے کے خلاف مختلف دلت تنظیموں کی طرف سے منظم کردہ ملک گیر احتجاج کے دوران تقریباً ایک درجن افراد کی اموات کیلئے کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتیں ذمہ دار ہیں۔

TOPPOPULARRECENT