Wednesday , September 26 2018
Home / شہر کی خبریں / کمزور طبقات کی ترقی ، حکومت کی اولین ترجیح،ریاستی وزیرجگدیش ریڈی کا جائزہ اجلاس

کمزور طبقات کی ترقی ، حکومت کی اولین ترجیح،ریاستی وزیرجگدیش ریڈی کا جائزہ اجلاس

حیدرآباد۔12۔ فروری (سیاست نیوز) ریاستی وزیر برائے بہبودیٔ درج فہرست طبقات جگدیش ریڈی نے کہاکہ تلنگانہ میں درج فہرست اقوام کی ترقی کے سلسلہ میں خصوصی فنڈس سے متعلق قانون ملک بھر کیلئے مشعل راہ ہے۔ کسی بھی ریاست میں اس طرح کا قانون نہیں جس کے تحت درج فہرست اقوام کی ترقی کیلئے زائد فنڈس کی گنجائش رکھی گئی ہے۔ جگدیش ریڈی نے آج ایس سی خصوصی ترقیاتی فنڈ پر جائزہ اجلاس منعقد کیا ۔ اس موقع پر جگدیش ریڈی نے کہا کہ جاریہ مالیاتی سال کے اختتام کیلئے 50 دن باقی ہیں۔ انہوں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ 45 تا 50 دنوں میں ایس سی طبقہ کی ترقی کیلئے خصوصی فنڈس کے خرچ کو یقینی بنائیں۔ ایس سی طبقہ کی ترقی کے لئے حکومت نے جو اسکیمات تیار کی ہیں ، ان پر عمل آوری ہونی چاہئے ۔ فنڈس کی اجرائی کوئی مسئلہ نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ سنہری تلنگانہ کی تشکیل کیلئے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے تمام طبقات کی ترقی کا منصوبہ تیار کیا ہے۔ ایس سی طبقہ کیلئے خصوصی قانون سازی اس بات کا مظہر ہے کہ چیف منسٹر درج فہرست اقوام کی ترقی میں کس قدر سنجیدہ ہیں۔ ایس سی طلبہ کیلئے اقامتی اسکولس کا قیام عمل میں لایا گیا ۔ ایس سی طالبات کیلئے علحدہ اسکولس قائم کئے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایس سی اقامتی اسکولوں کو مستحکم کرنے کیلئے کئی قدم اٹھائے گئے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اقامتی اسکولوں میں زیر تعلیم طلبہ بہترین رینک حاصل کریں گے ۔ اقامتی اسکولوں میں طلبہ کو کارپوریٹ طرز کی تعلیم مفت فراہم کی جارہی ہے اور حکومت کی جانب سے بنیادی سہولتیں جیسے ڈریس ، نصابی کتب ا ور قیام و طعام مفت فراہم کیا گیا ہے۔ اسٹڈی سنٹرس کے قیام کیلئے ایس سی طلبہ کو پیشہ ورانہ کورسس میں مفت کوچنگ کا اہتمام کیا گیا ہے ۔ جگدیش ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ میں تمام کمزور طبقات کی ترقی حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے، جب تک تمام طبقات کی یکساں ترقی نہیں ہوتی ، اس وقت تک سنہرے تلنگانہ کی تشکیل ممکن نہیں۔ جائزہ اجلاس میں پرنسپل سکریٹری فینانس رام کرشنا راؤ، پرنسپل سکریٹری ایس سی ڈیولپمنٹ جے بدھا پرساد ، راجیو ودیا مشن کے سکریٹری کشن ، اقامتی اسکول سوسائٹی کے سکریٹری آر ایس پراوین کمار اور کمشنر زراعت جگن موہن کے علاوہ دیگر عہدیداروں نے شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT