Saturday , November 18 2017
Home / جرائم و حادثات / کمسن مغویہ لڑکا اغواء کنندوں سے برآمد

کمسن مغویہ لڑکا اغواء کنندوں سے برآمد

ا9افراد بشمول 2 خواتین گرفتار، سندیپ شنڈلیہ کی پریس کانفرنس
حیدرآباد ۔ 8 اکٹوبر (سیاست نیوز) راجندر نگر کے علاقہ چنتل میٹ سے اغواء 4 سالہ لڑکے خلیل کو پولیس نے آزاد کرلیا ہے۔ اسپیشل آپریشن ٹیم اور شمس آباد پولیس نے اپنی خصوصی کارروائی میں لڑکے کو اغواء کاروں کے چنگل سے آزاد کرواتے ہوئے 9 افراد کو بشمول 2 خواتین کو گرفتار کرلیا ہے جبکہ ایک اور خاتون مفرور بتائی گئی ہے۔ یہ بات کمشنر پولیس سائبرآباد مسٹر سندیپ شنڈلیہ نے بتائی۔ انہوں نے آج ایک پریس کانفرنس کے دوران آزاد لڑکے خلیل کو اس کے والدین کے حوالے کیا اور تفصیلات بتائی۔ خلیل کا چنتل میٹ علاقہ سے 3 اکٹوبر کے دن اغواء ہوا تھا۔ ایک نامعلوم خاتون نے کرے دلانے کے بہانے خلیل کا اغواء کرلیا تھا اور اسے 15 ہزار روپئے کے عوض فروخت کردیا تھا۔ کمشنر پولیس نے بتایا کہ اس معاملہ میں اہم خاتون سرغنہ 20 سالہ فرحین بیگم ساکن سلیمان نگر، 22 سالہ عزیز خاں عرف اجو ساکن نجم نگر، 25 سالہ پروین بیگم ساکن گھوڑے کی خبر، 28 سالہ سید وحید ساکن گھوڑے کی قبر کو گرفتار کرلیا جبکہ ایک اور 25 سالہ خاتون فرحانہ بیگم ساکن گھوڑے کی قبر مفرور بتائی گئی ہے۔ سید وحید کی تین لڑکیاں اور اس شخص کولڑکے کی خواہش تھی۔ اس شخص کا لڑکا 5 ماہ کی عمر میں علالت کے سبب انتقال کر گیا تھا اور تب سے یہ شخص کسی بھی شکل لڑکے کو حاصل کرنا چاہ رہا تھا۔ لڑکے کو غریب خاندان سے خریدکر اس کو کفالت میں لینا چاہتا تھا لیکن اس کی یہ کوشش کامیاب نہیں ہوئی جس کے بعد وحید نے اپنے برادرنسبتی اجو سے رابطہ قائم کیا۔ اجو اور پروین نے منصوبہ تیار کیا اور 4 سالہ خلیل کو فرحین کی مدد سے اغواء کروالیا۔ پولیس نے شکایت حاصل ہونے کے بعد کارروائی کا آغاز کیا اور کمشنر سائبرآباد پولیس مسٹر سندیپ شنڈلیہ نے خصوصی دلچسپی لیتے ہوئے ایس او ٹی و خصوصی ٹیموں کی تشکیل دیتے ہوئے خلیل کو آزاد کروالیا اور ان کے والدین کے حوالے کردیا۔ خلیل کے والدین نے اپنے بیٹے کو حاصل کرنے کے بعد کمشنر کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر دیگر پولیس عہدیدار موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT