کم از کم 10 اقلیتی طبقہ کے طلباء ہونے پر اسکولس میں اردو اساتذہ کا تقرر ضروری :چیف منسٹر اترا کھنڈہریش راوت

دہرہ دون 15 مئی (سیاست ڈاٹ کام )ہر اسکول میں جہاں اقلیتی طبقہ کی طلباء کی تعداد 10 یا اس سے زیادہ ہو ایک اردو ٹیچر کا تقرر ضروری ہے ۔ چیف منسٹر اترا کھنڈ ہریش راو نے آج پردیش کانگریس کمیٹی کے اقلیتی شعبہ کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے یہ تبصرہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پوری ریاست میں جہاں بھی اقلیتی طلباء کی تعداد کم از کم 10 ہو وہاں جلد ہی ایک

دہرہ دون 15 مئی (سیاست ڈاٹ کام )ہر اسکول میں جہاں اقلیتی طبقہ کی طلباء کی تعداد 10 یا اس سے زیادہ ہو ایک اردو ٹیچر کا تقرر ضروری ہے ۔ چیف منسٹر اترا کھنڈ ہریش راو نے آج پردیش کانگریس کمیٹی کے اقلیتی شعبہ کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے یہ تبصرہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ پوری ریاست میں جہاں بھی اقلیتی طلباء کی تعداد کم از کم 10 ہو وہاں جلد ہی ایک اردو ٹیچر کا تقرر کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اُن کی حکومت اقلیتی فلاح و بہبود کی پابند ہے اور اردو ترجمان کا ایک عہدہ بھی قائم کرے گی جس پر سنجیدگی سے غور کیا جارہا ہے ۔ ریاستی حکومت کی جانب سے اقلیتوں کی فلاح و بہبود بشمول مدرسہ کی تعلیم کو ترقی دینے کیلئے اقدامات شامل ہیں کئے جارہے ہیں۔ ریاست میں دینی مدرسوں کو مسلمہ حیثیت دی گئی ہے ۔ ایک تین سالہ لائحہ عمل تیار کیا گیا ہے جس کے تحت ریاست میں قبرستانوں کے اطراف احاطہ تعمیر کیا جائے گا ۔ انہوں نے تیقن دیا کہ ہیم کند صاحب کے یاتریوں کو ہر ممکن سہولت فراہم کی جائے گی ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ایک پانچ سالہ لائحہ عمل وان گجروں کو کی باز آباد کاری کیلئے بھی تیار کیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT