Monday , September 24 2018
Home / Top Stories / ’ کم نے مجھے بوڑھا کہہ کر میری توہین کیوں کی ‘‘

’ کم نے مجھے بوڑھا کہہ کر میری توہین کیوں کی ‘‘

میں نے انہیں چھوٹا اور موٹا نہیں کہا تھا ، ٹرمپ کے طنزیہ ٹوئیٹ
ہنوئی ۔ /12 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ آج یہاں اپنے ایشیا دورہ کے دوران کئی سلسلہ وار ٹوئیٹس میں بعض موضوعات پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہ ’’نفرت کرنے والے اور بے وقوف امریکی و روسی تعلقات سے سیاسی کھلواڑ کررہے ہیں ۔ ٹرمپ نے اعلان کیا کہ انہوں نے شمالی کوریا کے حکمراں کم جونگ ان کو کبھی بھی چھوٹا اور موٹا ‘‘ نہیں کہا تھا ۔ ٹرمپ نے جو پانچ ایشیائی ممالک کے 12 روزہ دورہ کے دوران ویتنام میں تھے اور واشنگٹن سے روانگی کے بعد نسبتاً ٹوئیٹرپر خاموش تھے ۔ لیکن ہنوئی میں اپنی سرکاری خیرمقدمی تقریب کے فوری بعد ٹوئیٹر پر لوٹ آئے اور کچھ ہی دیر میں نصف درجن ٹوئیٹس کئے ۔ جن میں روس کے صدر ولادیمیر پوٹن سے اپنے تعلقات ، شمالی کوریا کو اس کے نیوکلیئر پروگرام سے باز رکھے ۔ چین کی کوششوں ، جیسے موضوعات کا احاطہ کیا ۔ اس کے علاوہ شمالی کوریا کے حکمراں کم جونگ ان کو اپنا دوست بنانے کی کوشش کے ضمن میں ایک طنزیہ ٹوئیٹ بھی کیا ۔ امریکی صدر نے ویتنام کے تفریحی مقام دانانگ میں منعقدہ ایپک چوٹی کانفرنس کے دوران روسی صدر پوٹن سے کئی مرتبہ ملاقات کی تھی ، روسی قائد کے ساتھ خوشگوار تعلقات استوار کرنے اپنی کوششوں کے مخالفین کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا ۔ ٹرمپ نے ایک ٹوئیٹ میں لکھا کہ ’’تمام نفرت کرنے والے اور بے وقوف اب یہ محسوس کررہے ہیں کہ روس کے ساتھ کام کرنے کیلئے خوشگوار تعلقات استوار کرنا کوئی بڑی بات نہیں بلکہ اچھی بات ہے ‘‘ ۔ انہوں نے مزید لکھا کہ ’’وہاں ہمیشہ سیاسی کھلواڑ کیا گیا ۔ جو ہمارے ملک کیلئے بُرا ہے ۔ میں شمالی کوریا ، شام ، یوکرین اور دہشت گردی کے مسائل حل کرنا چاہتا ہوں اور روس ہماری بہت مدد کرسکتا ہے ‘‘ ۔ کم جونگ ان کو دوست بنانے کی کوشش کے طور پر ایک طنزیہ ٹوئٹ کرتے ہوئے ٹرمپ نے لکھا کہ ’’ کم جونگ انہوں نے مجھے بوڑھا کہہ کر میری اہانت کیوں کی جبکہ میں نے انہیں کبھی چھوٹا (پستہ قد) یا موٹا نہیں کہا تھا ‘‘ ۔ دوسرے ٹوئٹ میں امریکی صدر نے لکھا کہ ’’میں نے انہیں اپنا دوست بنانے کی پوری کوشش کی اور ممکن ہے کسی دن (دوستی) ہوجائے گی ‘‘ ۔

 

Top Stories

TOPPOPULARRECENT