Saturday , December 15 2018

کناڈا کبھی خوفزدہ نہیں ہوگا، وزیراعظم ہارپر کا ادعا

اوٹاوا۔ 23 اکٹوبر۔(سیاست ڈاٹ کام) کناڈا کے وزیراعظم اسٹیون ہارپر نے کہا ہے کہ ان کا ملک حالیہ حملوں سے خوفزدہ نہیں ہو گا۔ اس سے قبل ایک مسلح شخص نے پارلیمان پر دھاوا بولنے سے پہلے ایک فوجی کو ہلاک کر دیا تھا۔ وزیراعظم نے ٹیلی ویژن پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کناڈا میں بربریت کرنے والے افراد کے خلاف کوششوں کو تیز کیا جائے گا۔ ’’اس ہفتے مل

اوٹاوا۔ 23 اکٹوبر۔(سیاست ڈاٹ کام) کناڈا کے وزیراعظم اسٹیون ہارپر نے کہا ہے کہ ان کا ملک حالیہ حملوں سے خوفزدہ نہیں ہو گا۔ اس سے قبل ایک مسلح شخص نے پارلیمان پر دھاوا بولنے سے پہلے ایک فوجی کو ہلاک کر دیا تھا۔ وزیراعظم نے ٹیلی ویژن پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کناڈا میں بربریت کرنے والے افراد کے خلاف کوششوں کو تیز کیا جائے گا۔ ’’اس ہفتے ملک میں پیش آئے واقعات سے ہمیں یہ یاد دلایا گیا ہے کہ سکیورٹی حکام پر حملہ اور ہمارے اداروں پر حملہ دراصل ہمارے معاشرے، ہماری روایات اور ایک آزاد جمہوری ملک ہونے کے ناطے کناڈا پر حملہ ہے۔ تاہم یہ غلط فہمی ہر گز نہ ہو کہ ہم ڈر جائیں گے۔ کناڈا کبھی کسی سے نہیں ڈرے گا‘‘۔ وزیراعظم ہارپر کے مطابق حملے سے اپنے اتحادیوں کے ساتھ شدت پسندی کے خلاف جنگ کا عزم مزید پختہ ہو گا۔ دارالحکومت اوٹاوا کی سکیورٹی ناکہ بندی ختم کر دی گئی ہے۔ تاہم پارلیمان کا علاقہ ابھی بند ہے۔

حملہ آور کی شناخت ہوگئی
دریں اثناء مسلح حملہ آور جسے جنگی یادگار پر فائرنگ میں ایک سکیورٹی اہلکار کو ہلاک کرنے کے بعد مار دیا گیا تھا اس کی شناخت مائیکل زیہاف بیبو کے نام سے کی گئی ہے اور وہ کناڈا کا شہری تھا۔ چہارشنبہ کو اوٹاوا میں ایک مسلح شخص نے جنگی یادگار کے باہر تعینات ایک فوجی کو گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا جس کے بعد ملک کی پارلیمان کے اندر اس کا پولیس کے ساتھ فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔ اوٹاوا میں پارلیمنٹ سمیت تین مقامات پر فائرنگ کے واقعے کے بعد بڑی سکیورٹی کارروائی جاری ہے۔ ایک مسلح شخص نے قومی یادگار کی حفاظت پر مامور ایک فوجی کو ہلاک کر دیا اور قریب موجود پارلیمنٹ کی عمارت میں گھس گیا، جہاں پولیس نے اس کا پیچھا کیا۔ حملہ آور پولیس کی فائرنگ سے ہلاک ہو گیا۔ اوٹاوا میں پولیس نے لوگوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ کھڑکیوں اور چھتوں سے دور رہیں۔ شہر میں لائبریریوں اور اسکولوں سمیت عوامی عمارتوں کو بند کر دیا گیا ہے۔ کناڈا میں فوجی اڈوں کو بھی بند کر دیا گیا ہے اور فوجی اور مسلح پولیس اہلکار شہر میں دوسرے مشتبہ حملہ آور کی تلاش کررہے ہیں۔

اوٹاوا میں فائرنگ افسوسناک : اوباما
اس دوران امریکی صدر براک اوباما نے کناڈا کے دارالحکومت اوٹاوا میں فائرنگ کے واقعے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ واشنگٹن کی اطلاع کے مطابق اوٹاوا میں فائرنگ سے ظاہر ہوتا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف لڑنے والی حکومت کو چوکس رہنا ہوگا۔ اوباما نے کہا کہ انہوں نے کناڈا کے وزیر اعظم اسٹیفن ہارپر سے فون پر بات کی ہے اور کناڈا کے عوام اور مہلوک فوجی کے خاندان کے ساتھ افسوس کا اظہار کیا ہے۔ اوباما نے کہا کہ اِس واقعہ نے سب کو متزلزل کردیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT