Wednesday , December 19 2018

کناڈا کی پارلیمنٹ پر حملہ، سپاہی اور حملہ آور ہلاک

بندوق بردار کی کئی راونڈ فائرنگ، وزیراعظم محفوظ عمارت مقفل کردی گئی، پورے علاقہ کی ناکہ بندی

بندوق بردار کی کئی راونڈ فائرنگ، وزیراعظم محفوظ
عمارت مقفل کردی گئی، پورے علاقہ کی ناکہ بندی

اوٹوا ۔ 22 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) کناڈا کی پارلیمنٹ پر بندوق بردار نے حملہ کیا، جس میں ایک سپاہی ہلاک ہوا۔ پولیس نے مشتبہ حملہ کو گولی ماردی۔ حملہ کے وقت پارلیمنٹ میں وزیراعظم اسٹیفن ہارپر موجود تھے۔ انہیں محفوظ طور پر نکال لیا گیا۔ پولیس نے سارے علاقہ کو گھیر لیا ہے۔ یہ فائرنگ ایک نومسلم کی جانب سے دو کناڈائی سپاہیوں کو اپنی کار کے نیچے کچل دینے کے واقعہ کے دو دن بعد ہوئی۔ پارلیمنٹ کے قریب ایک تعمیری مزدور نے بتایا کہ اس نے دیکھا کہ ایک بندوق بردار سیاہ لباس میں نقاب پہنے پارلیمنٹ کی طرف دوڑ رہا ہے۔ اس شخص نے ایک سیاہ کار کو روک دیا اور ڈرائیور کو باہر نکال کر کار کا اغواء کرلیا۔ سنٹر بلاک میں پارلیمنٹ ہل کی اصل عمارت ہے۔

ایک رکن پارلیمنٹ مارک اسٹرل نے پارلیمنٹ کے اندر سے ٹوئیٹر پر لکھا کہ آج صبح اووٹوا میں نہایت ہی کشیدہ صورتحال رونما ہوئی۔ ایک بندوق بردار ہمارے چیمبر کے باہر اندھادھند فائرنگ کررہا تھا۔ میں محفوظ ہوں اور میز کیلئے نیچے چھپ گیا ہوں۔ یہ میرے لئے ناقابل یقین واقعہ ہے۔ پارلیمنٹ کے اندر 30 راونڈ فائرنگ کی آواز سنی گئی۔ حکومت کے ایک وزیر نے بتایا کہ مشتبہ بندوق بردار کو پارلیمنٹ کے اندر گولی مار کر ہلاک کردیا گیا۔ یہ واضح نہیں ہوا کہ حملہ آور تنہا تھا یا اس کے ساتھ اور کوئی ہے۔ اووٹوا پولیس نے کہا کہ وہ دیگر مشتبہ افراد کو بھی تلاش کررہے ہیں۔ ارکان پارلیمنٹ نے بتایا کہ پارلیمنٹ کے اندر اور باہر فائرنگ کی آوازیں سن کر انہوں نے خود کو اپنے چیمبرس میں بند کرلیا اور کھڑکیوں سے دور رہے۔ پارلیمنٹ کے عہدیداروں نے سیکوریٹی الرٹ جاری کرتے ہوئے تمام ارکان کو چیمبرس میں رہنے کی ہدایت دی۔ اس علاقہ کے تمام سیل فونس کو بلاک کردیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT