Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / کنہیا کی ضمانت منسوخ کرنے درخواست پر 23 مارچ کو سماعت

کنہیا کی ضمانت منسوخ کرنے درخواست پر 23 مارچ کو سماعت

پیر کو سماعت سے عدالت کا گریز ۔ کنہیا پر عدالت میں جھوٹا حلف نامہ داخل کرنے کا الزام
نئی دہلی 17 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) دہلی ہائیکورٹ میںایک درخواست پر سماعت 23 مارچ کوم قرر کی گئی ہے جس میں استدعا کی گئی ہے کہ جے این یو طلبا تنظیم کے صدر کنہیا کمار کی عبوری ضمانت کو منسوخ کردیا جائے جن پر غداری کا الزام ہے ۔ جسٹس سریش کائت نے کہا کہ ٹرانسفر پر یہ درخواستیں موصول ہوئی ہیں اور اب ان پر 23 مارچ کو سماعت ہوگی ۔ تاہم جب جج نے سماعت 23 مارچ کو مقرر کی تو ایک درخواست گذار کے وکیل آر پی لوتھرا نے کہا کہ یہ مسئلہ فوجی نوعیت کا ہے اور اس پر 21 مارچ کو سماعت ہونی چاہئے ۔ ایڈوکیٹ لوتھرا کا مطالبہ ہے کہ کنہیا کمار کی عبوری ضمانت کومنسوخ کیا جانا چاہئے اور ان کے خلاف جھوٹی گواہی کا مقدمہ درج کیا جانا چاہئے ۔ لوتھرا نے بنچ سے کہا کہ ان کی درخواست ہے کہ چونکہ یہ حساس نوعیت کا اور فوری توجہ کا طالب مسئلہ ہے اس لئے اس درخواستر پر سماعت 21 مارچ کو کی جائے ۔ بنچ نے ان کی زبانی درخواست کو مسترد کردیا

 

اور کہا کہ پولیس موجود ہے جو حالات کو قابو میںکرسکتی ہے ۔ مسٹر لوتھرا درخواست گذار پرشانت کمار امراؤ کی جانب سے عدالت میں پیش ہوئے اور ان کا کہنا تھا کہ اس مسئلہ کو پیر کو ہی سماعت کیا جانا چاہئے ۔ ان کا کہنا تھا کہ کنہیا نے اپنی رہائی کے بعد سے جو تقاریر کی ہیں ان سے مزید نقصان ہوتا جا رہا ہے ۔ کل یہ مسئلہ جسٹس پرتبھا رانی کی عدالت میں پیش ہوا تھا جنہوں نے مناسب بنچ سے رجوع کرنے یہ مسئلہ دہلی کے چیف جسٹس کو منتقل رکدیا تھا ۔ درخواست گذار امراؤ کا ادعا تھا کہ کنہیا کمار نے اپنی عبوری ضمانت حاصل کرتے ہوئے عدالت میں عمدا اور اپنی مرضی سے جھوٹا حلفنامہ داخل کیا تھا ۔ ایک اور درخواست گذار ونیت جندال نے بھی کنہیا کمار کی عبوری ضمانت کو منسوخ کرنے کی استدعا کی ہے اور اس کاکہنا تھا کہ رہائی کے بعد سے کنہیا کمار نے جو تقاریر کی ہیں وہ بھی قوم مخالف ہیں اور اس نے ان تقاریر کے ذریعہ ضمانت کی شرائط کو پامال کیا ہے ۔
پوکھرن میں آج ائر فورس کی جنگی طاقت کا مظاہرہ
صدر جمہوریہ پرنب مکرجی مشاہدہ کرینگے
نئی دہلی 17 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) صدر جمہوریہ پرنب مکرجی کل راجستھان کے پوکھرن میں ائر فورس کی جنگی طاقت کا مشاہدہ کرینگے ۔ دو سال میں ایک مرتبہ منعقد ہونے والی اس مشق کو اکسر سائز آئرن فسٹ کا نام دیا جاتا ہے اور اس کا انعقاد ائر فورس فائرنگ رینج ( پوکھرن ) میں معل میں آئیگا ۔ راشٹر پتی بھون کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ اش مسق میں لڑاکا مشقیں اور فائرنگ اور فضا سے زمین پر اور فضا سے فضا میں وار کرنے کی صلاحیت کے حامل ہتھیاروں کو استعمال کیا جائیگا ۔ پوکھرن وہ مقام ہے جہاں ہندوستان نے 1974 اور 1998 میں نیوکلئیر تجربات کئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT