کوئی چین کو ڈکٹیٹ کرنے کی جرأت نہیں رکھتا: چینی صدر

بیجنگ – چین کے صدر شی چن پنگ نے کہا کہ ہم دوسری قوموں کو نقصان پہنچاکر ترقی نہیں کریں گے اور نہ ہی کسی ملک پر غلبہ کرنا چاہتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چینی صدر شی چن پنگ نے کمیونسٹ پارٹی کے چین پر حکمرانی کے چالیس برس مکمل ہونے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کسی حق نہیں کہ وہ چین اور چینی عوام پر اپنی مرضی مسلط کرے اور نہ کسی میں اتنی جرات ہے۔

چینی صدر کا کہنا تھا کہ ہمیں معاشی جنگ سے نہ ڈرایا جائے، چین اپنی اصلاحات جاری رکھے اور جس سے عوام کے لیے سہولت اور آسانیاں پیدا کی جاسکیں۔

خبر رساں ادارے کے مطابق چینی صدر نے کہا کہ ہم دوسری قوموں کو نقصان پہنچاکر ترقی نہیں کریں گے اور نہ ہی کسی ملک پر غلبہ کرنا چاہتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ آج چین دنیا کی دوسری بڑی اقتصادی قوت ہے، جو کروڑوں لوگوں کی محنت اور بہترین کارکردگی کا نتیجہ ہے۔

شی چن پنگ کا کہنا تھا کہ ہم پر کوئی حکم نہیں چلاسکتا، چین بخوبی جاتنا ہے کہ اسے کیا کرنا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ چین ایک عظیم پارٹی نظام سے کبھی منحرف نہیں ہوگا اور سوشل ازم کا عظیم پرچم ہمیشہ چینی سرزمین پر بلند رہے گا۔ شی چن پنگ کا کہنا تھا کہ سوشلسٹ نظام نے چین کی وجہ سے کامیابی حاصل کی اور سوشل ازم کے لیے کمیونسٹ پارٹی کی قیادت انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔

چینی صدر نے عوام کو حکمرانی کے چالیس برس مکمل ہونے پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ آج دنیا میں چین کا کوئی ثانی نہیں، ہم نے مسلسل محنت اور بہترین کارکردگی سے ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ چینی صدر کا مذکورہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب امریکا اور چین کے درمیان سفارت و تجارتی کشیدگی جاری ہے اور ہواوے کی اعلیٰ عہدیدار کی کینیڈا میں گرفتاری کے بعد اس کشیدگی میں مزید اضافہ ہوا ہے۔

TOPPOPULARRECENT