Tuesday , December 12 2017
Home / شہر کی خبریں / کودنڈا رام کو دھمکانے والے وزراء کی زبان کاٹ دی جائے

کودنڈا رام کو دھمکانے والے وزراء کی زبان کاٹ دی جائے

ٹی جی وینکٹش کے بیان پر کے سی آر کے جواب کی یاد دہانی ، محمد علی شبیر کا شدید ردعمل
حیدرآباد /9 جون ( سیاست نیوز ) قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر نے ٹی جے اے سی کے صدرنشین پروفیسر کودنڈا رام پر تنقید کرنے اور دھمکانے والے 12 وزراء کی زبانیں کاٹنے کا مطالبہ کیا ۔ آج اسمبلی کے احاطے میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر محمد علی شبیر نے کہا کہ متحدہ آندھراپردیش میں تلنگانہ تحریک کے دوران اس وقت کے ریاستی وزیر مسٹر ٹی جی وینکٹیش کی پروفیسر کودنڈا رام پر کی گئی تنقید کا جواب دیتے ہوئے کے سی آر نے انہیں زبان کاٹنے کی دھمکی دی تھی ۔ علحدہ تلنگانہ ریاست میں حکومت کی کارکردگی پر پروفیسر کودنڈا رام کی جانب سے سوال اٹھایا ہے ۔ پر ٹی آر ایس کابینہ کے ایک درجن وزراء نے نہ صرف انہیں تنقید کا نشانہ بنایا ہے بلکہ ان کی توہین کرتے ہوئے سنگین نتائج کی دھمکی بھی دی ہے ۔ اس پر چیف منسٹر کی خاموشی معنی خیز ہے ۔ کے سی آر کے دوہرے رویہ کا تلنگانہ کے عوام جائزہ لے رہے ہیں ۔ قائد اپوزیشن نے کہا کہ کانگریس پارٹی پچھلے دو سال سے اسمبلی اور کونسل کے علاوہ سڑکوں پر حکومت کی ناکامیوں کی وجوہات بیان کر رہی ہے وہی بات تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے صدرنشین پروفیسر کودنڈا رام نے کہی پر اس پر تلنگانہ کے 12 وزراء ان پر ٹوٹ پڑے اور غیر پارلیمانی الفاظ کا استعمال کرتے ہوئے ان کی توہین کی ہے ۔ مسٹر محمد علی شبیر نے میڈیا کو ویڈیو کلپ دیکھایا جس میں کے سی آر نے متحدہ آندھراپردیش کے وزیر ٹی جی وینکٹیش کی جانب سے پروفیسر کودنڈا رام کو تنقید کرنے انہیں زبان کاٹ دینے کی دھمکی دی تھی ۔ ساتھ ہی چیف منسٹر سے استفسار کیا کہ وہ اب اپنے وزراء اور دیگر قائدین جنہوں نے پروفیسر کودنڈا رام کے خلاف تنقید کی ہے ان کی زبانیں کب کٹ کرو گے قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل نے کہا کہ ٹی آر ایس کی دو سالہ کارکردگی مایوس کن ہے۔ زرعی پیداوار 60 فیصد گھٹ گئی ہے ۔ اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں غیر معمولی اضافہ ہوا ہے ۔ حکومت کی جانب سے تعلیمی شعبہ کو نظر انداز کردیا گیا ہے ۔ یونیورسٹیز کے وائس چانسلر کا ہنوزتقرر نہیں کیا گیا ۔ فیس ریمبرسمنٹ کی ادائیگی میں ٹال مٹول کی پالیسی اپنائی جارہی ہے ۔ 50 فیصد انجینئیرنگ کالجس بند کردئے گئے ہیں ایک لاکھ ملازمتیں فراہم کرنے کا وعدہ کرتے ہوئے بے روزگار نوجوانوں کو گمراہ کیا گیا ہے ۔ برقی کے نام پر فرضی تشہیر کی جارہی ہے ۔ کانگریس پارٹی ابتداء سے حکومت کی ناکامیوں کو آشکار کر رہی ہے ۔ مسٹر محمد علی شبیر نے نئے اضلاع کی تشکیل کیلئے روڈ میاپ جاری کرنے کا خیرمقدم کیا ۔

TOPPOPULARRECENT