’کول انڈیا‘ کی قیمتوں میں اضافہ

نئی دہلی۔ 9 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) سرکاری زیرانتظام کول انڈیا نے آج برقی اور غیربرقی دونوں نوعیت کے صارفین کیلئے تھرمل کوئلہ کی قیمتوں میں فوری اثر کے ساتھ اضافہ کردیا اور یہ فیصلہ کے بارے میں برقی پیداوار والے اداروں میں کہا کہ اس سے توانائی کی قیمتوں میں 0.50 روپئے فی یونٹ تک قیمتوں میں اضافہ ہوگا۔ ذرائع نے اشارہ دیا کہ قیمت میں اوسط اضافہ تقریباً 10 فیصد ہوسکتا ہے لیکن انڈین کیاپٹیو پاور پروڈیوسرس اسوسی ایشن نے دعویٰ کیا ہیکہ یہ اضافہ G-11 اور G-14 گریڈ فیول کیلئے 15-20 فیصد کی حد تک ہوگا۔ اس سے برقی 0.30-0.50 روپئے فی یونٹ مہنگی ہوجائے گی۔ کول انڈیا لمیٹیڈ کے بورڈ نے اپنی میٹنگ میں نان کوکنگ کول کی قیمتوں پر نظرثانی کو 9 جنوری 2018ء سے فوری اثر کے ساتھ منظوری دے دی۔ کول انڈیا نے بی ایس ای کیلئے اپنی فائلنگ میں یہ اطلاع دی لیکن اضافہ کی مقدار کا انکشاف نہیں کیا۔ کول انڈیا نے کہا کہ قیمتوں پر نظرثانی کے نتیجہ میں مالی سال 2017-18ء کی بقیہ مدت میں 1,956 کروڑ روپئے کی اضافی آمدنی ہوگی جبکہ جملہ آمدنی 6,421 کروڑ روپئے ہوجائے گی۔ تاہم پاور پروڈیوسرس کا کہنا ہیکہ کول انڈیا کے اقدام سے برقی شرحوں میں اضافہ ہوجائے گا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT