Tuesday , November 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / کوڑنگل میں حیوانات کے علاج میںمشکلات

کوڑنگل میں حیوانات کے علاج میںمشکلات

دیہی مقامات پر ڈاکٹروں کا فقدان، کسان برادری میں سخت مایوسی
کوڑنگل 19 اگسٹ (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) حلقہ اسمبلی کوڑنگل میں ان دنوں حیوانات کے علاج و معالجہ کی سہولتوں کا فقدان ہے۔ دیہی مقامات پر مویشیوں کا بروقت علاج نہ ہونے سے کسان برادری میں سخت مایوسی پائی جاتی ہے۔ ایک جانب حکومت گھریلو صنعتوں کے فروغ کے لئے مویشی فراہم کرتی ہے۔ لیکن ان کی صحیح دیکھ بھال اور ضروری ادویات کی فراہمی نہیں ہوپاتی۔ بیشتر کسانوں کا استدلال ہے کہ بروقت طبی سہولتوں کی عدم فراہمی مویشیوں کی ہلاکت کا سبب بن جاتی ہے۔ حلقہ اسمبلی کوڑنگل پانچ منڈلوں کوڑنگل، کوسگی، مدور، دولت آباد اور ممبرس پیٹ پر مشتمل ہے۔ ہر منڈل مستقر کے علاوہ نمائندہ دیہی مقامات پر بھی حیوانات کے لئے دواخانے قائم کئے گئے ہیں۔ تفصیلات کے بموجب کوڑنگل منڈل میں 13122 گائے، 7532 بھینس، 11516 بھیڑ، 10258 بکریاں، کوسگی منڈل میں 12815 گائے، 10739 بھینس، 33226 بھیڑ، 18110 بکریاں، مدور منڈل میں 13450 گائے، 8532 بھینس، 48546 بھیڑ، 17559 بکریاں، دولت آباد منڈل میں 12320 گائے، 4746 بھینس، 28488 بھیڑ، 10259 بکریاں، ممبرس پیٹ منڈل میں 12410 گائے، 6536 بھینس، 11312 بھیڑ اور 18642 بکریاں پائی جاتی ہیں۔ مویشیوں کی اتنی کثیر آبادی کے باوجود بھی ان کی طبی نگہداشت کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔ حلقہ اسمبلی کوڑنگل کے پانچ منڈل مستقر کے علاوہ نمایاں دیہی مقامات پر بھی دواخانے قائم ہیں مگر خاطر خواہ عملہ نہ ہونے سے بیشتر دواخانے مقفل ہوکر رہ گئے ہیں۔ دولت آباد منڈل میں نیٹور اور ماٹور کے سب سنٹرس مقفل پڑے ہوئے ہیں۔ کوسگی منڈل میں چندراونچہ سب سنٹر مقفل ہے۔ دیگر سب سنٹرس میں ناکافی عملہ سے کام چلایا جارہا ہے۔ ممبرس پیٹ منڈل میں تمکی میٹلہ، کوڑنگل منڈل میں راول پلی، حسن آباد، دولت آباد منڈل گوگا قصواد اور بالم پیٹ درکار عملہ کی عدم موجودگی سے سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ گورارم ایران، ایرن پلی، پالم پیٹ، چندراونچہ مقامات پر لائیو اسٹاک اسسٹنٹ اور کوتور نیور مقامات پر جی ای او کی جائیدادیں مخلوعہ ہیں لہذا مخلوعہ جائیدادوں پر عاجلانہ طور پر تقررات عمل میں لانے کے لئے پرزور مطالبہ کیا جارہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT