Tuesday , December 18 2018

کوڑنگل میں پرائمری ہیلت سنٹر کی زبوں حالی

کوڑنگل ۔ 19 ۔ فبروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حکومت کی جانب سے دیہی عوام کی سہولت کی خاطر بروقت طبی امداد پہنچانے کیلئے دیہی مقامات پر ابتدائی طبی امداد کے مراکز کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جن میں بیشتر مراکز کو 24 گھنٹے طبی خدمات کیلئے مختص کیا گیا ہے ۔ مگر تمام حلقہ اسمبلی کوڑنگل میں پرائمری ہیلت سنٹرز میں ڈاکٹروں اور عملہ کے ارکان کا فق

کوڑنگل ۔ 19 ۔ فبروری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حکومت کی جانب سے دیہی عوام کی سہولت کی خاطر بروقت طبی امداد پہنچانے کیلئے دیہی مقامات پر ابتدائی طبی امداد کے مراکز کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جن میں بیشتر مراکز کو 24 گھنٹے طبی خدمات کیلئے مختص کیا گیا ہے ۔ مگر تمام حلقہ اسمبلی کوڑنگل میں پرائمری ہیلت سنٹرز میں ڈاکٹروں اور عملہ کے ارکان کا فقدان پایا جاتا ہے ۔ یہ مراکز برائے نام چلائے جارہے ہیں ۔ نیز عہدیداران کی تساہلی و متعلقہ عملہ کی لاپرواہی سے 24 گھنٹے طبی خدمات کہیں پر بھی دیکھنے میں نہیں آرہی ہیں ۔ حلقہ اسمبلی کوڑنگل پانچ منڈلوں کوڑنگل ، کوسی ، مدور ، دولت آباد اور ممبرس پیٹ پر مشتمل ہے ۔ دواخانہ سرکاری کوڑنگل میں چھے جائیدادوں میں دو ڈاکٹرز ہی موجود ہیں ۔ کوسگی منڈل میں گُڑمال میں پرائمری ہیلت سنٹر میں لیڈی ڈاکٹر Maternity Leare پر ہیں ۔ دوسرے ڈاکٹر کا انتظام نہ ہونے پر نرسیں ہی ڈاکٹر کی خدمات انجام دے رہی ہیں ۔ مدور پرائمری ہیلت سنٹر میں دو ڈاکٹروں میں ایک Maternity Leare پر ہیں ۔ دوسری ڈاکٹر صاحب اگر رخصت لیں تو اسٹاف نرس ہی کام انجام دیتی ہیں ۔ دولت آباد پرائمری ہیلت سنٹر میں ڈاکٹر کی عدم موجودگی پر نرسیں ہی طبی خدمات انجام دیتی دکھائی دیتی ہیں ۔ ممبرس پیٹ پرائمری ہیلت سنٹر کا بھی یہی حال ہے ۔ عوام ارباب مجاز سے ملتمس ہیںکہ ڈاکٹروں اور عملہ کے ارکان کا بندوبست کرتے ہوئے انہیں مشکور کریں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT