Wednesday , July 18 2018
Home / کھیل کی خبریں / کوہلی کی ڈبل سنچری ، سری لنکاکیخلاف ہندوستان کی شاندار فتح یقینی

کوہلی کی ڈبل سنچری ، سری لنکاکیخلاف ہندوستان کی شاندار فتح یقینی

610 کے ہمالیائی اسکور پر اننگز ڈِیکلیر، مہمانوں پر 384 رنز کی ناقابل تسخیر سبقت ، روہت شرما کی تین سال بعد پہلی سنچری
ناگپور۔ 26 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) کپتان ویراٹ کوہلی نے سری لنکا کے خلاف جارحانہ بیٹنگ کے ذریعہ اپنی پانچویں ڈبل سنچری مکمل کرلی اور دوسرے ٹسٹ میچ کے تیسرے دن ہندوستان اپنی پہلی اننگز میں 6 وکٹ کے نقصان پر 610 رنز کا ہمالیائی اسکور بناتے ہوئے اننگز ڈیکلیر کرنے کا اعلان کرتے ہوئے مہمانوں کو ’اننگز شکست‘ کے دہانے پر پہونچا دیا۔ سری لنکا کی ٹیم آج کھیل کے اختتام تک ایک وکٹ کے نقصان سے 21 رنز بناچکی تھی اور اننگز شکست سے بچنے کے لئے اس کو مزید 384 رنز درکار ہیں۔ اس سے ثابت ہوگیا ہے کہ سری لنکا کی ٹیم پہلے ہی میچ سے باہر ہوگئی ہے اور بہت ممکن ہے کہ چوتھے دن رسمی طور پر یہ ضابطہ بھی مکمل ہوجائے گا۔ روہت شرما (102 رنز ناٹ آؤٹ) وراٹ نے اپنے کیریئر کا دوسرا بہترین اسکور اور پانچویں ڈبل سنچری بنائی۔ وراٹ نے 267 گیندوں پر 213 رنز کی اننگز میں 17 چوکے اور دو چھکے لگائے ۔روہت کی یہ تیسری ٹسٹ سنچری تھی جو چار سال کے وقفے کے بعد جاکر بنائی گئی ۔ روہت نے 160 گیندوں پر ناٹ آوٹ سنچری میں آٹھ چوکے اور ایک چھکا لگایا۔انہوں نے اپنی پچھلی سنچری نومبر 2013 میں ویسٹ انڈیز کے خلاف بنائی تھی۔ہندستان کی اننگز میں کل چار سنچری بنیں ۔ اوپنر مرلی وجے نے 128 اور چتیشور پجارا نے 143 رن بنائے تھے ۔ہندوستانی کپتان اپنی دُہری سنچری سے 5000 ٹیسٹ رنز کی قریب بھی پہنچ گئے ہیں۔ان کے اب 62 ٹسٹ سے 4975 رنز ہو گئے ہیں۔اوورال ان کی یہ 19 ویں ٹسٹ سنچری تھی اور ان کی کل 51 بین الاقوامی سنچری ہو چکی ہیں۔وراٹ نے چتیشور پجارا کے ساتھ تیسرے وکٹ لئے 183 رنز اور روہت کے ساتھ پانچویں وکٹ کے لئے 173 رن کی ساجھے داری کی۔وراٹ نے روہت کی سنچری مکمل ہونے کے ساتھ ہی ہندستان کی اننگز 610 رنز کے اسکور پر اعلان کر دی۔پہلی اننگز میں 405 رنز سے پچھڑنے کے بعد سری لنکا کی شروعات عجیب رہی اور اوپنر سدیرا سمروکرما فاسٹ بولر ایشانت شرما کی دوسری ہی گیند پر بولڈ ہو گئے ۔سمروکرما نے گیند کو چھوڑ دیا اور گیند آف اسٹمپ کے اوپری حصے کو چومتی ہوئی انہیں بولڈ کر گئی۔سری لنکا کو پہلے اوور میں ہی زبردست جھٹکا لگ گیا لیکن دمتھ کرونارتنے اور لاھرو ترمانے نے سری لنکا کو پھر کوئی اور نقصان نہیں ہونے دیا اور اسٹمپس تک اسکور ایک وکٹ پر 21 رن پہنچا دیا۔اسٹمپ پر کرونارتنے 11 اور ترمانے نو رن بنا کر کریز پر تھے ۔ہندستان نے صبح کل کے دو وکٹ پر 312 رنز سے آگے کھیلنا شروع کیا اور اپنی اننگز کا اعلان کرنے تک اس نے چار وکٹ گنوا کر اپنے ا سکور میں 298 رنز کا اضافہ کیا۔پجارا نے 121 اور وراٹ نے 54 رنز سے اپنی اننگز کو آگے بڑھایا۔پجارا نے بڑے صبر کے ساتھ صبح کا سیشن کیا اور انتہائی سست رنز بنائے ۔دوسری طرف وراٹ نے جارحانہ تیور دکھاتے ہوئے رن بٹورنے کا سلسلہ جاری رکھا۔پجارا تیسرے وکٹ کے طور پر داسن شناکا کا شکار بنے ۔پجارا کا جب وکٹ گرا تو ہندستان کا اسکور 399 رنز تک پہنچ چکا تھا۔صبح کے سیشن میں اس شراکت میں بنے 87 رنز میں پجارا کی شراکت صرف 22 رنز رہی ۔ اجنکیا رہانے اسٹمپس سے باہر کی گیند کو کھیلنے کی کوشش میں دمتھ کرونارتنے کو آسان کیچ دے بیٹھے ۔رہانے نے دو رنز بنائے ۔رہانے کو آؤٹ ھونے کے بعد اس بات کا ضرور افسوس رہا ہو گا کہ کیوں انہوں نے ایسا شاٹ کھیلنے کی جلدی کی جبکہ وکٹ بلے بازی کے مکمل طور دوستانہ ہو چکا تھا۔اس کے بعد میدان میں اترے روہت نے اس موقع کا پورا فائدہ اٹھایا اور چار سال کے طویل وقفے کے بعد اپنی تیسری سنچری بنا ڈالی ۔ دوسرے سرے پر وراٹ کے ہونے کی وجہ سے روہت پر رنز کی رفتار کو لے کر کوئی دباؤ نہیں تھا۔وراٹ من مانے انداز میں سری لنکا کے گیند بازوں کے ساتھ جیسے کھیل کرتے ہوئے رنز بٹور رہے تھے۔

TOPPOPULARRECENT