Tuesday , November 21 2017
Home / کھیل کی خبریں / کوہلی کی28 ویں سنچری ‘ہندوستان نے سیریز 3-1 سے جیت

کوہلی کی28 ویں سنچری ‘ہندوستان نے سیریز 3-1 سے جیت

India celebrates their victory and winning of the series after finishing the fifth One Day International (ODI) match between West Indies and India at the Sabina Park Cricket Ground in Kingston, Jamaica, on July 6, 2017. / AFP PHOTO / JIM WATSON (Photo credit should read JIM WATSON/AFP/Getty Images)

 

کنگسٹن۔7 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کپتان ویراٹ کوہلی اپنے فام میں واپس آئے اور جب وہ اپنے رنگ میں لوٹ آئیں تو پھر مخالف ٹیم کے لئے انہیں روکنا مشکل ہو جاتا ہے ۔کچھ ایسا ہی ویسٹ انڈیز کے ساتھ پانچویں ونڈے میں ہوا۔ہندوستانی کپتان (ناٹ آؤٹ 111) نے اپنی 28 ویں سنچری بناتے ہوئے ٹیم انڈیا کو79 گیند باقی رہتے آٹھ وکٹ سے کامیابی دلانے کے ساتھ سیریز 3۔1 سے اس کے نام کر دی۔ہندستان نے محمد سمیع کے48 رنزپر چار وکٹ اور امیش یادو کے 53 رنز پر تین وکٹ کی بدولت ویسٹ انڈیز کو 50 اوور میں نو وکٹ پر205 رنز کے آسان اسکور پر روک دیا اور پھر کپتان کوہلی کی 115 گیندوں پر 12 چوکوں اور دو چھکوں سے سجی ناٹ آؤٹ111 رنز کی عمدہ اننگز کی بدولت 36.5 اوورز میں دو وکٹ پر 206 رنز بنا کر میچ جیت لیا۔کوہلی کی یہ28 ویں ونڈے سنچری تھی اور ہدف کا کامیابی سے تعاقب کرتے ہوئے 18 ویں سنچری تھی۔اس کے ساتھ ہی وراٹ نے ہدف کا کامیابی سے تعاقب کرتے ہوئے سب سے زیادہ سنچری بنانے میں ریکارڈ کے بادشاہ سچن تندولکر کا ریکارڈ توڑ دیا۔کوہلی کو ‘مین آف دی میچ’ کا ایوارڈ ملا جبکہ سیریز میں مسلسل شاندار کارکردگی کرنے والے اجنکیا رہانے کو ‘مین آف دی سیریز’ کا ایوارڈ ملا۔ہندستان نے اس کے ساتھ ہی ویسٹ انڈیز کے خلاف مسلسل ساتویں دو طرفہ سیریز جیت حاصل کر لی۔پہلا میچ بارش کی نذر ہونے کے بعد ہندستان نے اگلے دونوں مقابلے اپنے نام کئے لیکن چوتھے میچ میں ہندستان کو شکست کا سامنا کرنا پڑا۔اس طرح پانچواں میچ فیصلہ کن بن گیا۔کوہلی گزشتہ دو میچوں میں جلد آؤٹ ہو گئے تھے ۔وہ ان دو میچوں میں تین اور 11 رن ہی بنا پائے تھے ۔ایسے میں فیصلہ کن میچ میں ان پر بھی کافی دباؤ تھا لیکن ہندوستانی کپتان نے شاندار اننگز کھیلی اور دکھایا کہ کیوں انہیں ماسٹر چیزر کہا جاتا ہے ۔کوہلی گزشتہ دو میچوں میں ایک ہی قسم سے شارٹ پچ گیندوں پر آؤٹ ہوئے تھے لیکن اس مرتبہ انہوں نے ان غلطیوں کو نہیں دہرایا اور بہتر انداز میں کھیلا ۔ ویسٹ انڈیز کے بولروں نے کوہلی کو آؤٹ کرنے کے لئے ان کا باؤنسرس سے استقبال کیا لیکن کوہلی ان کے نیٹ ورک میں نہیں پھنسے ہوئے اور انہوں نے اپنی 28 ویں سنچری مکمل کرنے کے ساتھ ہندستان کو فتح دلا کر ہی دم لیا۔دیگر بیٹسمینوں میں ٹیم میں شامل کئے گئے دوسرے وکٹ کیپر بیٹسمین دنیش کارتک نے بھی نصف سنچری اسکور کی جیسا کہ انہوںنے 52 گیندوں میں 5 چوکوں کی مدد سے 50 رنز اسکور کئے۔قبل ازیں ہندوستان کو نشانہ کے تعاقب میں ابتدائی نقصان جلد ہی برداشت کرنا پڑا جب ناقص فام میں موجود قومی اوپنر شکھر دھون4 رنز بناکر 5کے مجوعی اسکور پر آوٹ ہوئے ۔راہانے نے 51 گیندوں میں39 رنز بنائے۔

 

TOPPOPULARRECENT