Saturday , September 22 2018
Home / کھیل کی خبریں / کوہلی کے جارحانہ برتاؤ کو شاستری کی حمایت

کوہلی کے جارحانہ برتاؤ کو شاستری کی حمایت

سڈنی۔5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی ٹسٹ ٹیم کے نئے کپتان ویراٹ کوہلی کے میدان پر جارحانہ برتاؤ کو ٹیم کے ڈائریکٹر روی شاستری کی حمایت حاصل ہے جنہوں نے کہا کہ کوہلی کے اس طرح کے برتاؤ کی وجہ سے کھلاڑی کی جانب سے بہتر مظاہرے دیکھنے کو مل رہے ہیں۔ خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کو دیئے گئے اپنے خصوصی انٹرویو میں شاستری نے کہا کہ کوہلی کے جارحانہ رویہ کا ٹیم کو فائدہ ہورہا ہے، جیسا کہ خود کوہلی نے بھی رواں سیریز تین سنچریاں اسکور کی ہیں جبکہ آسٹریلیائی ٹیم کی جانب سے ان کے مظاہروں کی ستائش کی جارہی ہے۔ روی شاستری نے ٹسٹ کرکٹ سے سبکدوش ہونے والے سابق کپتان مہیندر سنگھ دھونی کے حیران کن فیصلہ کا بھی دفاع کیا ہے اور کہا ہے کہ پانچ روزہ کرکٹ سے کنارہ کشی اختیار کرنا دھونی کا ایک ایسا فیصلہ ہے جس میں ان کا کوئی مفاد نہیں۔ شاستری نے ان خیالات کی سختی سے تردید کی ہے کہ کوہلی اور دھونی کے درمیان کسی قسم کی کوئی اختلاف ہے بلکہ وہ ایک دوسرے کی عزت کرتے ہیں۔ اپنے انٹرویو میں انہوں نے اس سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ کوہلی کو بحیثیت کپتان اپنے جارحانہ رویہ کو بدلنے کی ضرورت نہیں ہے، کیونکہ اگر وہ تین ٹسٹ مقابلوں میں ناکام ہوتے تو پھر میں ان کے اس رویہ پر کچھ کہہ سکتا تھا۔ شاستری سے جب یہ سوال کیا گیا کہ اب جبکہ کوہلی ٹسٹ ٹیم کے کپتان بن چکے ہیں تو کیا انہیں اپنے جارحانہ رویہ کو تبدیل کرنا ہوگا؟ شاستری نے جواب میں کہا کہ کوہلی کے جارحانہ رویہ کی وجہ سے نوجوان کپتان کو فائدہ ہورہا ہے کیونکہ وہ سیریز میں 500 رنز اسکور کرنے کے قریب پہنچ چکے ہیں۔ شاستری نے ملبورن میں سر ویوین رچرڈس کے کوہلی کے متعلق بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ رچرڈس نے بھی وہاں کوہلی کے برتاؤ کی ستائش کی ہے جبکہ خود آسٹریلیائی کھلاڑی کوہلی کے مظاہروں سے متاثر ہیں، شاستری کے بموجب کوہلی نوجوان ہیں اور وہ بتدریج سیکھتے جائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT