Tuesday , August 14 2018
Home / Top Stories / کٹھوا سانحہ احتجاج: ٹرین خدمات کی ناکہ بندی

کٹھوا سانحہ احتجاج: ٹرین خدمات کی ناکہ بندی

مدھیہ پردیش میں نابالغوں کی عصمت ریزی کے مجرمین کو سزائے موت کا احتجاج پرتشدد
کولکتہ ۔ 20 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) کٹھوا اور اناؤ عصمت ریزی مقدمات کے نتیجہ میں جنوب مشرقی ریلوے کی ٹرین خدمات بری طرح متاثر ہوئی اور ہزاروں مسافر اسٹیشنوں پر پھنس گئے کیونکہ احتجاجیوں نے کٹھوا اور اناؤ عصمت ریزی مقدمہ کے متاثرین کے ساتھ انصاف کا مطالبہ کرتے ہوئے ٹرین خدمات کی ناکہ بندی کی تھی۔ یہ احتجاج دو مرحلوں میں مغربی بنگال کے علاقوں چینگیل اور الوبیریا اسٹیشنوں پر جو ہوڑا ۔ کھڑکپور سیکشن میں واقع ہے، کیا گیا تھا جس کی وجہ سے مضافاتی ٹرینوں کے 28 جوڑے منسوخ کردیئے گئے۔ ریلوے کے ترجمان نے کہا کہ جملہ 19 میل ؍ ایکسپریس ٹرینیں راستہ میں روک دی گئیں۔ دیگر 3 مضافاتی ٹرینوں کا سفر مختصر کردیا گیا۔ پانچ ایکسپریس ٹرینوں کے اوقات تبدیل کردیئے گئے۔ عوام کے گروپ نے چینگیل اسٹیشن کی 7:30 بجے صبح اور الوبیریا اسٹیشن کی 11:48 بجے دن ناکہ بندی کردی تھی۔ بعض افراد احتجاجی مظاہرہ بھی اولوبیریا اسٹیشن پر کررہے تھے۔ 2:40 بجے دن سے 4 بجے دن تک چینگیل اسٹیشن کی ناکہ بندی کی گئی۔ برہانپور سے موصولہ اطلاع کے بموجب ایک احتجاجی جلوس نابالغ لڑکیوں کی عصمت ریزی کرنے والے ملزمین کو سزائے موت دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے منعقد کیا گیا جو بعدازاں پرتشدد احتجاج میں تبدیل ہوگیا کیونکہ احتجاجی مظاہرین سنگباری کررہے تھے اور گاڑیوں کی توڑپھوڑ میں بھی مصروف تھے۔ ایک ہزار سے زیادہ احتجاجی مظاہرین نے پرتشدد واقعات اور سنگباری میں حصہ لیا۔ تقریباً 10 موٹر کاروں کی کوتوالی کے علاقہ میں ونڈ اسکرین توڑ دیئے گئے۔ سپرنٹنڈنٹ پولیس برہانپور پنکج سریواستو نے کہا کہ تشدد کا آغاز اس وقت ہوا جبکہ احتجاجیوں نے اپنے مطالبات پر مبنی ایک یادداشت سب ڈیویژنل مجسٹریٹ کے حوالہ کی۔ صورتحال بے قابو ہوگئی تھی۔ چنانچہ متصلہ اضلاع سے پولیس کی مزید جمعیت طلب کرلی گئی اور علاقہ میں چوکسی اختیار کرلی گئی۔ ایک گاڑی کے مالک کی شکایت پر ایف آئی آر درج کرلیا گیا اور تحقیقات جاری ہیں۔

TOPPOPULARRECENT