Friday , September 21 2018
Home / شہر کی خبریں / کڈیم سری ہری ،ٹیچرس ٹریننگ قومی جائزہ کمیٹی کے صدرنشین مقرر

کڈیم سری ہری ،ٹیچرس ٹریننگ قومی جائزہ کمیٹی کے صدرنشین مقرر

این سی ای آر ٹی کے 55 ویں اجلاس میں وزیرفروغ انسانی وسائل پرکاش جاوڈیکر کا اعلان
حیدرآباد۔/11 اپریل، ( سیاست نیوز) مرکزی وزیر فروغ انسانی وسائل پرکاش جاوڈیکر نے ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ کڈیم سری ہری کو ملک بھر میں ٹیچرس کو تربیت فراہم کرنے کا جائزہ لینے والی کمیٹی کا صدر نشین نامزد کیا۔ دہلی میں آج این سی ای آر ٹی کے 55 ویں کونسل کے پرکاش جاوڈیکر کی صدارت میں منعقدہ اجلاس میں تعلیمی مسائل کے علاوہ مختلف اُمور کا جائزہ لیا گیا جس کے بعد وزیر تعلیم و ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری کو سارے ملک میں ٹیچرس کو تربیت فراہم کرنے کا جائزہ لینے والی کمیٹی کا صدر نشین نامزد کیا گیا۔ اس موقع پر کڈیم سری ہری نے تلنگانہ حکومت کی جانب سے تعلیم کو فروغ دینے کیلئے کئے جانے والے اقدامات پر روشنی ڈالی۔ مختلف اسکجیمات اور نئے پروگرامس کے تعلق سے مرکز کو روانہ کردہ تجاویز پر تفصیلات پیش کی۔ لڑکیوں کی تعلیمی تجاویز ایم ایچ آر ڈی کو پیش کئے۔ کستوربا گاندھی گرلز اسکولس کو 12 ویں جماعت تک توسیع دینے پر مرکزی حکومت سے اظہار تشکر کیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ مرکزی حکومت کے اس فیصلہ سے بچپن کی شادیوں کی روک تھام ہوگی اور لڑکیوں کو تعلیم جاری رکھنے میں معاون و مددگار ثابت ہوگی۔ ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری نے کہا کہ تلنگانہ حکومت کی جانب سے این سی ای آر ٹی کو کئی تجاویز اور مشورے دیئے گئے ہیں تلنگانہ میں 12 ہزار آنگن واڑی سنٹرس اسکولس چلائے جارہے ہیں ملک بھر میں پری پرائمری اسکولس کا آغاز کرنے کی مرکز سے نمائندگی کی گئی ہے۔ مڈ ڈے میل ، اسکول یونیفارمس 12ویں جماعت تک فراہم کرنے میں تعاون کرنے کی مرکز سے اپیل کی گئی۔ سروا سکھشا ابھیان، آر ایم ایس اے ٹیچر ٹریننگ تمام کو مشترکہ طور پر سرواسکھشا ابھیان اسکیم میں شامل کرنے کی تجویز کو مرکز کے سامنے پیش کیا گیا۔ مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر نے تعلیمی بجٹ 20فیصد اضافہ ہونے کا اعتراف کرتے ہوئے آئندہ سال سے 20فیصد فنڈز بڑھانے سے اتفاق کیا ہے۔ تلنگانہ کے تمام اضلاع میں ( ڈائیٹ ) ڈسٹرکٹ انسٹی ٹیوشنس آف ایجوکیشن اینڈ ٹریننگ سنٹرس قائم کرنے کا مرکز سے مطالبہ کیا۔ ساتھ ہی نئے اضلاع میں بھی جواہرنودیا اسکولس قائم کرنے کی بھی نمائندگی کی گئی۔ لڑکیوں کی تعلیم پر دی گئی تجاویز کو حکومت نے صرف تجاویز کے طور پر ہی قبول کیا ہے۔ لڑکیوں کی تعلیم کو فروغ دینے کیلئے مزید اقدامات کرنے پر زور دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے بتایا کہ آدھار کے ذریعہ اسٹوڈنٹ ٹریکنگ سسٹم کا آغاز کیا گیا اس کے علاوہ تلنگانہ کے تعلیمی اسکیمات سے تفصیلی طور پر واقف کروایا گیا۔

TOPPOPULARRECENT